Saturday , November 25 2017
Home / دنیا / ترکی میں سات ہزار سے زائد ملازمین برخاست

ترکی میں سات ہزار سے زائد ملازمین برخاست

انقرہ۔15 جولائی ۔(سیاست ڈاٹ کام) ترکی نے گزشتہ سال کی ناکام بغاوت کی کوششوں میں ملوث ہونے کے الزام میں تقریباً سات ہزار سے زیادہ پولیس، وزارتوں کے ملازمین اور تدریسی عملہ کو برخاست کر دیا ہے۔ حکومت نے یہ کارروائی عدلیہ، پولیس اور تعلیم سے متعلقہ سرکاری اداروں میں ہم آہنگی لانے کیلئے کی ہے ۔ ترکی میں اس واقعہ پر ایک سال مکمل ہونے کو ہے ، جس میں کچھ بے قابو فوجیوں نے عمارتوں پر بم حملہ کیا تھا اور عام شہریوں پر گولیاں چلائی تھیں۔ترک حکام نے اس بغاوت کی کوششوں کیلئے مسلم مذہبی لیڈر فتح اللہ گولن کو مورد الزام ٹھہرایا تھا ۔ اس بغاوت کے ذریعہ جولائی 2016 ء میں ترک صدر رجب طیب اردوگان کو اقتدار سے بیدخل کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔تاہم، امریکہ میں رہنے والے مولوی فتح اللہ گولن نے اس بغاوت میں کسی بھی کردار سے انکار کیا تھا۔اس کے بعد سے امریکہ نے گولن کی حوالگی کے ترکی کے مطالبے پر خاموشی اختیار کر رکھی ہے ۔ملازمین کو برخاست کرنے کا حکم پانچ جون کو دیا گیا تھا جسے جمعہ کو سرکاری گزٹ میں شائع کیا گیا۔ واضح ر ہے کہ 16جولائی 2016 ء کو ہونے والے اس تشدد میں 250 سے زیادہ لوگ ہلاک ہو گئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT