Friday , September 21 2018
Home / Top Stories / ترکی میں شام کی خانہ جنگی پر اہم کانفرنس، پوٹن اور روحانی کی شرکت

ترکی میں شام کی خانہ جنگی پر اہم کانفرنس، پوٹن اور روحانی کی شرکت

انقرہ۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں صدر ترکی رجب طیب اردغان اپنے روسی ہم منصب ولادیمیر پوٹن کے علاوہ اپنے ایرانی ہم منصب حسن روحانی سے بھی ملاقات کررہے ہیں جو گزشتہ چھ ماہ کے دوران ان کی دوسری سہ فریقی ملاقات ہے تاکہ شام میں جاری خانہ جنگی کو ختم کرنے کی کوششوں کو تیز تر کیا جائے۔ اس سہ رخی ملاقات کا شام کے حالات پر خاطر خواہ اثر مرتب ہوگا۔ یاد رہے کہ قبل ازیں پوٹن کی میزبانی میں بحراسود کے شہر سوچی میں پہلی کانفرنس کا انعقاد ہوا تھا۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہے کہ اس کانفرنس کے انعقاد سے کچھ گھنٹوں قبل ہی امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ وہ شام سے امریکی فوج کو واپس طلب کرنا چاہتے ہیں جو اس بات کی علامت ہے کہ امریکہ، شام سے بہت جلد دستبردار ہونا چاہتا ہے۔

شام میں داعش کو تباہ کرنے پوٹن کا دعویٰ
ماسکو۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) روسی صدر ولادیمر پوٹن نے آج کہا کہ شام میں دولت اسلامیہ (داعش) کو پسپا کردیا گیا ہے ، لیکن ابھی ان کی تباہ کن سرگرمیاں جاری رہنے کا امکان ہے اور وہ دنیا بھر کے دیگر ممالک میں حملے کرسکتے ہیں۔ یہ اطلاع انٹرفیکس نیوز ایجنسی نے ان کے حوالے سے دی ہے ۔ انٹرفیکس کی رپورٹ کے مطابق مسٹر ولادیمر پوٹن نے کہا کہ بظاہر داعش کی عسکری قوت تباہ ہونے کے باوجود اس کے پاس تباہ کن سرگرمیاں جاری رکھنے کی صلاحیت ہے اور وہ تیزی سے اپنا حربہ بدلنے کی اہلیت بھی رکھتے ہیں۔ داعش کے جنگجو دنیا بھر کے دیگر ممالک میں حملے کرسکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT