Friday , November 24 2017
Home / Top Stories / ترکی میں کار بم دھماکہ ، 27 ہلاک ، 75 زخمی

ترکی میں کار بم دھماکہ ، 27 ہلاک ، 75 زخمی

انقرہ ۔ /13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) وسطی انقرہ کے مصروف ترین چوراہا پر آج ایک کار بم دھماکہ ہوا جس کے نتیجہ میں 27 افراد ہلاک اور 75 زخمی ہوگئے ۔ یہ شہر کے سفارتخانوں والے علاقے سے انتہائی قریب ہے اور کلیدی تجارتی و ٹرانسپورٹ مرکز ہے ۔ حادثہ کے فوری بعد کزیلے چوراہا پر ایمبولنس کثیر تعداد میں دیکھی گئی ۔ دھماکہ کے اثر سے کئی گاڑیاں بشمول ایک بس جلکر ملبہ میں تبدیل ہوگئی ۔ چند ہفتہ قبل ہی شہر میں خودکش کار بم دھماکہ ہوا تھا جس میں فوج کو نشانہ بنایا گیا اور 29 افراد ہلاک ہوئے تھے ۔ ممنوعہ کردستان ورکرس پارٹی (پی کے کے ) کے ناراض گروپ نے /17 فبروری کو ہوئے دھماکے کی ذمہ داری قبول کی تھی ۔ صوبائی گورنر کے دفتر نے بتایا کہ آج ہوئے حملے میں 27 افراد ہلاک اور 75 زخمی ہوئے ہیں ۔ کزیلے اسکوائر کے قریب دھماکو مادوں سے لدی کار کے سبب یہ واقعہ پیش آیا ۔ میڈیکل ذرائع نے بتایا کہ زخمیوں کو شہر کے 10 مختلف ہاسپٹلس میں شریک کیا گیا ہے جن میں اکثر کی حالت تشویشناک ہے ۔ ترکی گزشتہ سال سے متواتر بم حملوں کا نشانہ بن رہا ہے ۔ ان میں سے اکثر حملوں کیلئے اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) کو مورد الزام قرار دیا گیا ۔ اس وقت ترکی کو آئی ایس اور کرد باغیوں کے سبب سکیورٹی خطرات کا سامنا ہے ۔ پی کے کے سے مربوط کردستان فریڈم فالکنس (ٹی اے کے ) نے انقرہ میں فبروری کو ہوئے بم حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا تھا کہ ملک کے جنوب مشرقی علاقے میں ترکی فوج کی کارروائی کا یہ انتقام ہے ۔ اس کے علاوہ ملک میں آنے والے بیرونی سیاحوں کو بھی اس نے خبردار کیا تھا ۔ حکومت اور کردباغیوں کے مابین دو سالہ جنگ بندی گزشتہ سال کے وسط میں ناکام ہوگئی ۔ اس کے بعد سے سکیورٹی فورسیس نے پی کے کے کے خلاف بڑے پیمانے پر مہم شروع کی ہے ۔ کرد زیراثر کئی ٹاؤنس اور شہروں میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT