Friday , September 21 2018
Home / Top Stories / تریپورہ میں بی جے پی کی فتح وزیراعظم مودی کی مرہون منت

تریپورہ میں بی جے پی کی فتح وزیراعظم مودی کی مرہون منت

عوام نے تبدیلی کے حق میں فیصلہ دیا ، مقابلہ کیلئے سی پی آئی ایم کا جذبہ قابل ستائش : رام مادھو
اگرتلہ ۔ 3 مارچ ۔( سیاست ڈاٹ کام ) تریپورہ میں اسمبلی انتخابات میں بی جے پی اکثریت حاصل کرتے ہوئے ایک نئی تاریخ بنارہی ہے اور اس پارٹی نے اپنی کامیابی کا کریڈٹ وزیراعظم نریندر مودی اور تبدیلی کیلئے ریاستی عوام کی خواتین کو دیا ہے ۔ ووٹوں کی گنتی کے تازہ ترین رجحان کے مطابق بی جے پی 29 اس کی حلیف انڈیجنس پیپلز فرنٹ آف تریپورہ ( ائی پی ایف ٹی ) کو 8حلقوں میں سبقت حاصل ہوگئی ہے ۔ اس ریاست میں 25 سال سے حکمراں سی پی آئی ( ایم ) کو 17 حلقوں میں سبقت حاصل ہے ۔ بی جے پی کے جنرل سکریٹری رام مادھو نے یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’وزیراعظم نریندر مودی نے تریپورہ میں چار ریلیوں سے خطاب کیا تھا ۔ انھوں نے سخت محنت سے کام کیا تھا اور ہماری مہم کی مسلسل نگرانی کررہے تھے ۔ اس ( کامیابی) کاکریڈیٹ اُن ہی کو جانا چاہئے ‘‘ ۔ انھوں نے کہاکہ سی پی آئی ( ایم ) کی زیرقیادت حکومت کو شکست دینے کیلئے بی جے پی کی اپیل پر تریپورہ کے عوام نے مثبت جواب دیا۔

جہاں وہ ( سی پی آئی ایم ) زائد از دو دہائیوں سے برسراقتدار تھی ۔ بی جے پی نے انتخابی مہم کے دوران سخت جانفشانی کے ساتھ مقابلہ کرنے سی پی آئی ( ایم ) کے جذبہ کی ستائش بھی کی لیکن کہا کہ عوام ایک نئی حکومت چاہتے تھے ۔ 60 رکنی اسمبلی کے 59 حلقوں میں 18 فبروری کو رائے دہی ہوئی تھی ۔ سی پی آئی ( ایم ) امیدوار کے انتقال کے سبب ایک حلقہ میں رائے دہی ملتوی کردی گئی تھی ۔ رام مادھو نے کہاکہ ناگالینڈ میں بی جے پی اور اس کی حلیف جماعت نیشنلسٹ ڈیموکریٹ پروگریسیو پارٹی ( این ڈی پی پی ) بہتر مظاہرہ کی ہے ’’ہم توقع کرتے ہیں کہ وہاں اپنی ماقبل انتخابات کی حلیف جماعت این ڈی پی پی کے ساتھ حکومت بنائیں گے ‘‘ ۔ 60 رکنی ناگالینڈ اسمبلی کے 59 حلقوں میں 27 فبروری کو رائے دہی ہوئی تھی اور ایک حلقہ سے سابق چیف منسٹر نیپیوریو بلامقابلہ منتخب ہوگئے تھے ۔ 39 حلقوں سے دستیاب رجحانات کے مطابق بی جے پی 17 اور اس کی حلیف ناگا پیپلز فرنٹ کو 18 حلقوں میں سبقت حاصل ہوگئی ہے ۔ مادھو نے کہاکہ میگھالیہ میں ایک معلق اسمبلی تشکیل پارہی ہے ۔ چیف منسٹر مکل سگنما دو حلقو ںسے منتخب ہوگئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT