تشدد اور درندگی سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہوسکتا : وزیراعظم

امن و عدم تشدد ہمیشہ کامیاب ۔ مودی کا من کی بات خطاب ‘ گئو دہشت گردوں کے ہاتھوں مسلمانوں کی ہلاکت کا تذکرہ نہیں

نئی دہلی ۔ /24 جون (سیاست ڈاٹ کام) جلیان والا باغ جیسے واقعہ کے پیچھے پائے جانے والے پیام کو دہراتے ہوئے کہ درندگی اور تشدد سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہوسکتا وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ امن اور عدم تشدد کی ہی ہمیشہ جیت ہوئی ہے ۔ اس واقعہ کا حوالہ دیتے ہوئے جو آئندہ سال جلیان والا باغ واقعہ کے 100 سال پورے ہوں گے مودی نے کہا کہ عوام کو یہ پیام یاد رکھنا چاہئیے جو آج بھی باعث درس ہے ، امرتسر کے جلیان والا باغ میں اس وقت برطانوی فوج نے اندھادھند فائرنگ کرکے سینکڑوں بے گناہ معصوم افراد کا قتل عام کیا ہے ۔ اس فائرنگ میں کئی افراد زخمی ہوئے تھے ۔ اپنے ماہانہ ’’من کی بات‘‘ ریڈیو خطاب میں وزیراعظم مودی نے کہا کہ تشدد اور ظلم و زیادتی سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہوسکتا ۔ امن اور عدم تشدد کی فضاء ہی ہمیشہ قائم و دائم رہے گی اور آخر میں شہیدوں اور جانبازوں کی فتح ہوگی اور انہیں ہی خراج حاصل ہوگا ۔ وزیراعظم مودی نے اپنے خطاب میں حالیہ ہونے والے ایسے کسی واقعہ کا حوالہ نہیں دیا جبکہ گاؤ کشی کے نام پر بے گناہ مسلمانوں کا قتل کیا جارہا ہے ۔ تشدد پر تقریر کرتے ہوئے وزیراعظم نے گائے کے نام پر ہونے والی ہلاکتوں کا ذکر نہیں کیا ۔ ہاپور میں مویشی لے جانے کے الزام میں ہجوم کی جانب سے ایک 44 سالہ مسلم شخص کی ہلاکت کے علاوہ ماضی قریب میں ایسے کئی پرتشدد واقعات ہوئے ہیں جس میں گائے کے نام پر مسلمانوں کو موت کے گھاٹ اتارا دیا گیا ہے ۔اس کے علاوہ فرضی واٹس اپ پیامات پر بچہ کو اٹھالئے جانے پر بھی تشدد کے ذریعہ ہلاکتیں ہوئی ہیں ۔ مودی نے جدوجہد آزادی ہند کی تاریخ کی روشنی میں کہا کہ اس دوران طویل اور بہت بڑی بڑی ان گنت قربانیاں دی گئی ہیں ۔ سال 2019 ء میں جلیان والا باغ کے ہولناک واقعہ کے 100 سال پورے ہوں گے ۔ یہ ایک ایسا واقعہ تھا جس سے ساری انسانیت رو اٹھی تھی ۔ آخر /13 اپریل 1919 ء کے اس تاریک دن کو کوئی بھول سکتا ہے ۔ جب طاقت و اختیارات کا بیجا استعمال کرکے تمام حدیں پارکرلی گئیں تھیں ۔ جارحیت و سفاکیت کی حدود کو پھلانک کر انسانیت سوز حرکت کی گئی تھی ۔ نہتے اور بے بس معصوم انسانوں پر گولیاں چلائی گئیں تھیں ۔ ہم اس ہولناک واقعہ کے 100 سال پورے ہونے کی یاد کس طرح مٹاسکتے ہیں ۔ تشدد کا حوالے دیتے ہوئے وزیراعظم نے گرونانک اور کبیرداس کی تعلیمات کی اہمیت کو اجاگر کیا اور کہا کہ سماج میں ذات پات کے امتیازات کا خاتمہ کرنے کی ضرورت ہے ۔ انسانیت کو فروغ دینے کا وقت آگیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT