Wednesday , December 19 2018

تشدد کا واحد جواب ترقی ، نکسلائٹس کو وزیراعظم مودی کا پیام

چھتیس گڑھ میں کئی ترقیاتی پراجکٹس کا آغاز، قبائیلیوں کیلئے شہرت یافتہ ریاست کو اسمارٹ سٹی کے ذریعے معروف بنانیکا ادعا
بھیلائی (چھتیس گڑھ) 14 جون (سیاست ڈاٹ کام) ترقی تشدد کا واحد جواب ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے آج واضح پیغام نکسلائٹس کو دیتے ہوئے جو چھتیس گڑھ میں پرتشدد مہم میں ملوث ہیں، یہ بات کہی۔ وہ ایک جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے جو 22 ہزار کروڑ روپئے مالیتی ترقیاتی پراجکٹس کے چھتیس گڑھ میں آغاز کے سلسلہ میں منعقد کیا گیا تھا۔ چھتیس گڑھ میں جاریہ سال انتخابات مقرر ہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ اُن کی حکومت اعتماد کا ماحول تخلیق کرنے کے لئے کام کررہی ہے۔ اُنھوں نے مختلف اقدامات کی فہرست پیش کی جو بی جے پی زیرقیادت مرکزی اور ریاستی حکومتوں کی جانب سے کئے جارہے ہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ میں سمجھتا ہوں کہ ترقی تشدد کا یا کسی بھی قسم کی سازش کا واحد جواب ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ حقیقی ترقی سے جو اعتماد پیدا ہوتا ہے وہ کسی بھی قسم کے تشدد کا انسداد کرسکتا ہے۔ اُنھوں نے حاضرین کے سامنے یہ تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ چھتیس گڑھ میں نکسلائٹس شورش پسندی کی وجہ سے مصائب کا بول بالا ہے۔ نکسلائٹس بڑے پیمانے پر تشدد برپا کررہے ہیں جس کے مناظر عام طور پر دیکھے جاسکتے ہیں۔ اُنھوں نے اعتماد کا ماحول تخلیق کرنے کا تذکرہ کرتے ہوئے کہاکہ حکومت نے اِس بات کو یقینی بنایا ہے کہ قدرتی وسائل جیسے معدنیات سے حاصل ہونے والی آمدنی کا ایک حصہ ترقی کے لئے اور مقامی شہریوں کی فلاح و بہبود کے لئے مختص کردیا جائے۔

اُنھوں نے کہاکہ چھتیس گڑھ کو 3 ہزار کروڑ روپئے اضافی فنڈس کے طور پر دیئے جائیں گے جنھیں دواخانوں، اسکولوں اور بیت الخلاؤں کی تعمیر پر خرچ کیا جائے گا۔ اِس فنڈ کو سڑکوں کی تعمیر کے لئے بھی استعمال کیا جاسکے گا۔ اُنھوں نے کہاکہ مرکزی حکومت قبائیلیوں کی آمدنی میں اضافہ کرنے کے لئے اقدامات کررہی ہے تاکہ پسماندہ علاقوں میں طرز زندگی میں تبدیلی آسکے۔ اُنھوں نے کہاکہ آج جو پراجکٹس شروع کئے گئے ہیں اُن میں سے چند سب سے پہلے جگدل پور اور رائے پور کے درمیان فضائی راستہ شروع کرنے کے لئے مختص ہیں۔ نریندر مودی نے کہاکہ اُنھوں نے خواب دیکھا ہے کہ جو شخص ’’ہوائی اپا‘‘ پہنتا ہے وہ ہوائی جہاز میں ضرور سفر کرتا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ یہی اسکیم اُڑان کا مقصد ہے جو مرکزی حکومت نے چھوٹے شہروں کو فضائی راستے کے ذریعہ مربوط کرنے کے لئے شروع کر رکھی ہے۔ مودی نے کہاکہ اُن کی حکومت سڑکیں اور ایرپورٹس ایسے علاقوں میں تعمیر کررہی ہے جہاں سابق حکومتیں سڑکوں کی تعمیر بلکہ قیام کو بھی مشکل سمجھتی تھیں۔ قبل ازیں رائے پور ایرپورٹ صرف روزانہ 6 پروازوں کی حد تک محدود تھا لیکن اب یہاں سے روزانہ 50 پروازیں روانہ ہوتی ہیں۔ وزیراعظم نے سابق یو پی اے حکومت پر جو مرکز میں برسر اقتدار تھی، الزام عائد کیاکہ اُس نے چھتیس گڑھ کو نظرانداز کیا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ چیف منسٹر چھتیس گڑھ رمن سنگھ نے ریاست میں انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی ’’آئی آئی ٹی‘‘ قائم کی ہے اور سابقہ حکومت اِس مطالبہ کو طویل عرصہ سے نظرانداز کررہی تھی۔ اُنھوں نے کہاکہ چیف منسٹر چھتیس گڑھ نے این ڈی اے حکومت کے برسر اقتدار آتے ہی دیرینہ مطالبے کو جو آئی آئی ٹی سے متعلق تھا، مکمل کردیا اور آئی آئی ٹی بھلائی قائم کی گئی۔ مودی نے کہاکہ ریاستی حکومت نے ایک ماہ طویل وکاس یاترا کا اہتمام کیا ہے۔ چھتیس گڑھ ماضی میں اپنے جنگلات اور قبائیلی افراد کی وجہ سے شہرت رکھتا تھا لیکن اب اسمارٹ سٹی کے نام سے شہرت رکھتا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ رائے پور ملک کا اولین گرین فیلڈ اسمارٹ سٹی ہے جو ریاستی حکومت نے قائم کیا ہے۔ مودی نے کہاکہ نیا رائے پور ایک متحدہ کمان اور کنٹرول برائے فلاح و بہبود رکھتا ہے، یہ اپنی نوعیت کا اولین ادارہ ہے جس کا افتتاح آج ہوا۔ اُنھوں نے کہاکہ یہ ایک مثالی نمونہ ہے جو ملک کے دیگر اسمارٹ سٹیز کے سامنے ہے۔ نیا رائے پور ایک نئے ہندوستان کی راہ ہموار کرے گا۔

TOPPOPULARRECENT