Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تشکیل تلنگانہ سے تاحال ایک لاکھ کروڑ کی سرمایہ کاری

تشکیل تلنگانہ سے تاحال ایک لاکھ کروڑ کی سرمایہ کاری

۔4118 صنعتوں کے قیام کی منظوریاں ، شہر میں کارپوریٹ شعبہ کے دفاتر
حیدرآباد ۔ 16 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد تین سال کے دوران تلنگانہ میں ایک لاکھ کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری ہوئی ہے ۔ 4118 صنعتوں کے قیام کے لیے منظوریاں دی گئی ہیں جن میں 2.90 لاکھ افراد کو روزگار کے مواقع حاصل ہورہے ہیں جب علحدہ تلنگانہ کی تحریک عروج پر تھی اس وقت مخالفین تلنگانہ نے ریاست کی تقسیم کی صورت میں تلنگانہ کی ترقی تھم جانے سرمایہ کاری نہ ہونے اور برقی بحران پیدا ہوجانے کے دعوے کرتے ہوئے مرکز پر دباؤ بنانے کی لمحہ آخر تک کوشش کی تھی علحدہ تلنگانہ کی تشکیل کے بعد دعوے غلط ثابت ہورہے ہیں ۔ متحدہ آندھرا پردیش میں برقی بحران پر کئی تاجرین نے اندرا پارک پر دھرنا منظم کرتے ہوئے صنعتی شعبہ کو مناسب برقی سربراہ کرنے کا حکومت سے مطالبہ کیا تھا ۔ آج عوام اور صنعتی شعبہ کو معقول برقی سربراہ کی جارہی ہے ۔ ریاست کے تین اضلاع میں تجربہ کے طور پر کسانوں کو 24 گھنٹے برقی سربراہ کی جارہی ہے ۔ حکومت کی نئی صنعتی پالیسی سے تاجرین بڑے پیمانے پر تلنگانہ کا رخ کررہے ہیں ۔ ٹی ایس آئی پاس پالیسی تلنگانہ کے لیے سود مند ثابت ہورہی ہے ۔ شہر حیدرآباد میں انٹرنیشنل کارپوریٹ اداروں کے دفاتر قائم ہورہے ہیں گذشتہ تین سال کے دوران تلنگانہ میں 1,01,720 کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری ہوئی ہے ۔ اس کے علاوہ حکومت نے 4118 نئے کمپنیوں کے قیام کے لیے منظوریاں دی ہیں جن سے 2 لاکھ 90 ہزار افراد کو روزگار کے مواقع حاصل ہورہے ہیں ۔ فخر کی بات یہ ہے کہ عالمی سطح کے اجلاس کے لیے حیدرآباد بہت بڑا مرکز بن کر ابھر رہا ہے ۔ 28 تا 30 نومبر تک حیدرآباد میں منعقد ہونے والے عالمی بزنس کنونشن میں وزیراعظم نریندر مودی کے بشمول صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ کی دختر ایونکا ٹرمپ بھی شرکت کررہی ہیں جو امریکن حکومت کی مشیر بھی ہے ۔ اس کنونشن کو کامیاب بنانے کے لیے تلنگانہ حکومت کی جانب سے بڑے پیمانے پر تیاریاں کی جارہی ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT