Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / تعلیمی اداروں میں معیار کو بہتر بنانے حکومت کے موثر اقدامات

تعلیمی اداروں میں معیار کو بہتر بنانے حکومت کے موثر اقدامات

ویجلنس کے ذریعہ کالجس کی تنقیح غیر معیاری ادارے بند کردئیے گئے
حیدرآباد۔27ڈسمبر (سیاست نیوز) ریاستی حکومت کی جانب سے تعلیمی اداروں میں معیار کو بہتر بنانے کیلئے اقدامات کے تحت کالجس کے معائنے کروائے گئے اور ویجلنس کے ذریعہ بھی کالجس کی تنقیح کروائی گئی۔ ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر کڈیم سری ہری نے قانون ساز کونسل میں مباحث کے دوران یہ بات بتائی ۔ جناب محمد علی شبیر قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل اور مسٹر ایم رنگا ریڈی کی جانب سے ایوان میں اٹھائے گئے سوال کے جواب میں مسٹر کڈیم سری ہری نے بتایا کہ کالجس کے طلبہ کو اسکالر شپس کی اجرائی اور تعلیمی فیس باز ادائیگی کا مسئلہ محکمہ سوشل ویلفیر کا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جہاں تک کالجس کا معاملہ ہے حکومت نے معیار کو بہتر بنانے اور غیر ضروری کھولے گئے کالجس جہاں تعلیم نہیں ہو رہی ہے اور طلبہ نہیں ہیں ان کو بند کرنے کے اقدامات کئے گئے ہیں۔ جناب محمد علی شبیر نے اس سوال کے دوران تعلیمی اداروں میں پولیس اور ویجلنس کے ذریعہ تنقیح و معائنوں پر شدید اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ تعلیمی اداروں میں اس طرح کی کاروائیاں مناسب نہیں ہیں۔ بھارتیہ جنتا پارٹی رکن قانون ساز کونسل مسٹر این رام چندر راؤ نے بھی کالجس میں پولیس کے ذریعہ ریکارڈس کی تنقیح کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ محکمہ تعلیم سے تعلق رکھنے والے اور ماہرین تعلیم کے ذریعہ ہی کالجس کے معائنے کروائے جائیں۔ مسٹر کڈیم سری ہری نے بتایا کہ ریاست میں تنقیح کے بعد 47انجنیئرنگ کالجس کے الحاق کو منسوخ کیا گیا ہے جبکہ 15فارمیسی کالجس کے الحاق کو منسوخ کیا گیا ہے اسی طرح 10ایم بی کالجس کے الحاق کو برخواست کردیاگیا ہے جن میں خامیاں پائی گئی ہیں۔انہوںنے بتایا کہ ان کالجس کے الحاق سے داخلو ںمیں دشواریاں نہیں آئی ہیں کیونکہ ریاست میں قابل لحاظ نشستیں موجود ہیں اور انجنئیرنگ میں کنوینر کوٹہ کی نشستیں بھی پر نہیں ہو پا رہی ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے بتایا کہ ریاست میں موجود کالجس کی بد عنوانیوں و بے قاعدگیوں کے سبب ان کے خلاف قانون کے دائرے میں کاروائی کی گئی ہے ۔ انہوں نے اس بات کا اعتراف کیا کہ ٹیٹ اور ایمسیٹ کے لئے خانگی کالجس انتظامیہ کی جانب سے جگہ فراہم نہیں کروائی گئی لیکن حکومت نے سرکاری کالجس میں مراکز قائم کرتے ہوئے ایمسیٹ اور ٹیٹ 2016کا کامیابی کے ساتھ انعقاد عمل میں لایا۔ انہوںنے بتایا کہ ڈائریکٹر جنرل ویجلنس کو حکومت نے فیس بازادائیگی اور دیگر امور میں بے قاعد گی کے مرتکب اداروں کے خلاف رپورٹ اور سفارشات حکومت کو پیش کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT