Wednesday , November 22 2017
Home / Top Stories / تعلیم کا انسانی وسائل کے فروغ میں اہم رول ‘ ارون جیٹلی

تعلیم کا انسانی وسائل کے فروغ میں اہم رول ‘ ارون جیٹلی

کتور میں سمبیاسس یونیورسٹی کی افتتاحی تقریب ۔ مرکزی وزیر فینانس کے علاوہ ریاستی وزیر آئی ٹی کے ٹی آر کا خطاب
حیدرآباد 24 جولائی ( پی ٹی آئی ) مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے آج کہا کہ ہندوستانی زرعی شعبہ میں ملازمتیں بہت کم ہے ۔ ہندوستانی زرعی شعبہ ملک کی جملہ گھریلو پیداوار کا 16 فیصد حصہ ادا کرتا ہے ۔ ضلع محبوب نگر کے کتور منڈل میں سمبیاسس یونیورسٹی کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر جیٹلی نے کہا کہ کچھ ترقی یافتہ مملک میں لوگ اس شعبہ کی سمت متوجہ ہو رہے ہیں اور امید ہے کہ ہندوستان نوجوانوں کیلئے بھی اس میں مواقع دستیاب ہوں اگر وہ بہتر تربیت حاصل کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں زراعت کا شعبہ کاشتکاروں کیلئے زیادہ کچھ راحت فراہم نہیں کرتا ۔ در حقیقت اس میں ملازمتیں بہت کم ہیں۔ ہم اس بات کے متقاضی نہیں ہوسکتے کہ زرعی شعبہ میں 55  فیصد لوگ جملہ گھریلو پیداوار کا 16 فیصد فراہم کریں۔ اسی سے عدم مساوات کو فروغ حاصل ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مینوفیکچرنگ کے شعبہ میں ہماری خواہش یہ ہے کہ یہ شعبہ ہماری معیشت کا 25 فیصد حصہ ادا کرے ۔ اس کوشش میں ہم نے پہلے صنعتی انقلاب کے وقت دستیاب موقع گنوا دیا ۔ ہم نے دوسرے اور تیسرے صنعتی انقلاب کے موقع کو بھی گنوا دیا ۔ جو کم قیمت پر مینوفیکچرنگ کا تھا ۔ وزیر فینانس کے مطابق چین اور دوسرے ایشیائی ممالک کی معیشتوں کو ہندوستان سے زیادہ فائدہ ہوا ہے ۔ اب ایسا لگتا ہے کہ چوتھا صنعتی انقلاب ہندوستان کیلئے موقع فراہم کرسکتا ہے اور ہمیں امید ہے کہ ہم اس سے فائدہ اٹھاسکتے ہیں تاہم اس تعلق سے قطعیت سے کچھ نہیں کہا جاسکتا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک تلخ حقیقت ہے کہ ہم سروسیس پر مبنی معیشت رکھتے ہیں ۔ سروسیس کا شعبہ ہماری جملہ گھریلو پیداوار کا 60 فیصد حصہ ادا کرتا ہے ۔ خانگی شعبہ کی جانب سے اعلی تعلیم کے فروغ کے اقدامات کا تذکرہ کرتے ہوئے وزیر فینانس نے کہا کہ 20 – 25  سال قبل یہ سب کچھ تصور میں بھی نہیں تھا ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں عوام اسی وقت فائدہ حاصل کرسکتے ہیں جب وہ تربیت یافتہ ہوں اور ان کو انسانی وسائل میں تبدیل کیا جائے ۔ ہم دنیا کی بڑی آبادیوں میں سے ایک ہیں اور ایک اہم تبدیلی یہ ہو رہی ہے کہ بیشتر ترقی یافتہ ممالک میں کنٹراکٹ پر خدمات حاصل کی جا رہی ہیں۔ وہاں عمر کا مسئلہ ہے ۔ وہاں ان کے پاس اتنی تعداد میں لوگ نہیں ہیں کہ خود ان کا نظام سنبھال سکیں۔ ہم اتنی کثیر آبادی سے کیا کرسکتے ہیں۔ یقینی طور پر تعلیم انسانی وسائل کے فروغ میں اہم رول ادا کرتی ہے ۔ انسانی وسائل نہ صرف ہندوستان کیلئے بلکہ ساری دنیا کیلئے اہمیت کے حامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جیسے جیسے ملک ترقی کر رہا ہے لوگوں میں حکومت سے باہر کیرئیر بنانے کی خواہش بڑھ رہی ہے جبکہ تنگ معیشت میں ہر کوئی سرکاری ملازمت کا خواہشمند ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 20 – 25 سال قبل وہ تصور بھی نہیں کرسکتے تھے کہ اتنے بڑے موثر تعلیمی ادارے یا خانگی تعلیمی ادارے قائم ہونگے ۔ اسکول کی سطح پر تعلیمی ادارے قائم ہوسکتے تھے تاہم اعلی تعلیمی سطح پر اس کا گمان بھی نہیں تھا ۔ تقریب سے ریاستی وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے بھی خطاب کیا اور یونیورسٹی کو ہر ممکن مدد کا تیقن دیا ۔ تقریب سے قبل ارون جیٹلی اور کے ٹی راما راؤ نے یونیورسٹی کا تفصیلی مشاہدہ کیا اور جیٹلی نے یہاں شجر کاری پروگرام میں بھی حصہ لیا ۔ جیٹلی نے کے ٹی آر کو آج ان کی سالگرہ کے موقع پر مبارکباد بھی پیش کی ۔

TOPPOPULARRECENT