Friday , November 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / تعلیم کے فروغ کیلئے تلنگانہ حکومت سنجیدہ

تعلیم کے فروغ کیلئے تلنگانہ حکومت سنجیدہ

نارائن پیٹ میں جلسہ، وزیر صحت لکشما ریڈی کا خطاب
نارائن پیٹ۔ 17 اگست (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) تلنگانہ حکومت تعلیم کے معاملے میں نہایت سنجیدہ ہے۔ تعلیم سب کے لئے اور معیاری تعلیم کے نظریہ کو عام کرنے اور اس پر عمل آوری کیلئے کوشاں ہے۔ مسٹر لکشما ریڈی ریاستی وزیر صحت تلنگانہ نے جلسہ عید ملاپ اور ٹاپر ایوارڈس میں خطاب کرتے ہوئے کہا۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم اور روزگار کے معاملے میں تلنگانہ کو ملک بھر میں سرفہرست مقام پر کھڑا کرنا تلنگانہ حکومت کا مقصد ہے۔ انہوں نے طلباء کو مشورہ دیا کہ وہ تعلیم کے ساتھ اخلاقیات پر بھی توجہ دیں۔ ایس آئی او نارائن پیٹ یونٹ کی جانب سے جلسہ عید ملاپ اور ٹاپر ایوارڈس کا انعقاد عمل میں لایا گیا تھا۔ اجلاس کی صدارت جناب عبدالملک شارق صدر ایس آئی او تلنگانہ نے کی جبکہ مہمان خصوصی کے طور پر ڈاکٹر سی لکشما ریڈی ریاستی وزیر صحت، مسٹر بنڈاری بھاسکر ضلع پریشد چیرمین، لئیق احمد ایس آئی او قومی سیکریٹری، محمد رفیق ریاستی دعوۃ سیکریٹری جماعت اسلامی ہند تلنگانہ ، محمد ابرار علی ریاستی سیکریٹری ایس آئی او تلنگانہ، شیوا کمار ریڈی ٹی آر ایس حلقہ اسمبلی انچارج، ناگوراؤ ناماتی بی جے پی ریاستی قائد، ایس کرشنا کانگریس حلقہ اسمبلی انچارج، مجاہد صدیقی جماعت اسلامی احمد خاں ناظم ضلع جماعت اسلامی امیر الدین ایڈوکیٹ، رؤف حسام الدین، محمد ایوب جڑچرلہ نے شرکت کی۔ جناب لئیق احمد ایس آئی او نیشنل سیکریٹری نے کہا کہ ایس آئی او ملک میں اخلاقیات کو فروغ دینا چاہتی ہے اور طلباء کو گھیرنے والی برائی کو دور کرنا چاہتی ہے۔ انہوں نے طلباء کو مشورہ دیا کہ تعلیمی دور میں وہ اپنی بھرپور توجہ تعلیم کے حصول پر ہی مرکوز کریں اور بہترین تعلیم حاصل کرکے اپنے والدین اور ملک کا نام روشن کریں۔ جناب محمد رفیق سیکریٹری جماعت اسلامی نے کہا کہ سب کا مالک ایک ہے۔ تمام قدیم مقدس سمجھی جانے والی کتابیں بھی خدا کے ایک ہونے کا ثبوت پیش کرتی ہیں۔ ایک خدا کو ماننے والوں کے درمیان اونچ نیچ اور بھید بھاؤ نہیں ہونا چاہئے۔ شیوا کمار ریڈی ٹی آر ایس ضلع سیکریٹری نے ہر سال ٹاپر طلباء کو انعامات ایس آئی او کے ذریعہ فراہم کرنے کا اعلان کیا۔ اجلاس کی نظامت محمد نصیرالدین نے کی۔ محمد ارشد فیصل، ظہیرالدین صوفی، محمد انور نے اجلاس کی نگرانی کی۔ محمد ارشد فیصل نے شکریہ ادا کیا۔

TOPPOPULARRECENT