Monday , November 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / تقررات میں مسلمانوں کو تحفظات کا مطالبہ

تقررات میں مسلمانوں کو تحفظات کا مطالبہ

محبوب نگر میں مسلم ریزرویشن جوائنٹ ایکشن کمیٹی کا اجلاس

محوب نگر 26 جولائی (ذریعہ ای میل) حکومت کی جانب سے 15000 جائیدادوں پر تقررات میں مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات دینے کا مسلم ریزرویشن جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے۔ الحاج سید نورالحسین معتمد عیدگاہ کمیٹی کی رہائش گاہ پر منعقدہ اجلاس میں مسلم ریزرویشن جوائنٹ ایکشن کے صدر ظفراللہ صدیقی کی صدارت میں مسٹر کے چندرشیکھر راؤ چیف منسٹر تلنگانہ سے پرزور مطالبہ کیا گیا ہے کہ بھرتی کے لئے 15000 جائیدادوں میں 12 فیصد ریزرویشن کے ساتھ مسلمانوں کے بچوں کو تحفظات دیئے جائیں تو مسلمانوں کا ایک بڑے طبقہ کیلئے بہتر ثابت ہوگا اور یہ ثابت ہوگا کہ حقیقت میں چیف منسٹر تلنگانہ مسلمانوں کے ہمدرد ہیں۔ ایک آرڈیننس کے ذریعہ جائیدادوں پر بھرتی کے لئے 12 فیصد تحفظات دیئے جائیں۔ اس موقع پر سید نورالحسین معتمد عیدگاہ کمیٹی نے کہاکہ چیف منسٹر کے سی آر ہی واحد چیف منسٹر ہوں گے جو 12 فیصد ریزرویشن دے سکتے ہیں۔ جو ایک تاریخ ہوگی۔ الحاج محمد رفیق احمد قادری نے چیف منسٹر مسٹر کے سی آر کو مبارکباد دیتے ہوئے کہاکہ یہ واحد چیف منسٹر ہیں جنھوں نے سرکاری سطح پر دعوت افطار و غریبوں کو کھانا کپڑا کی فراہمی، شادی بیاہ کے لئے رقمی امداد کا رواج قائم کیا اور قوی توقع ہے کہ وہ 12 فیصد ریزرویشن بھی مسلمانوں کو دیں گے۔ اس موقع پر زاہد حسین ہاشمی، محمد حسن لکچرر، محمد نذیرالدین، محمد عزیز احمد نے چیف منسٹر سے 12 فیصد ریزرویشن کی جلد از جلد عمل آوری کی اپیل کی۔ محمد ظفر اللہ صدیقی صدفر ایم آر جے اے سی محبوب نگر نے کہاکہ ریزرویشن کی عمل آوری تک حکومت کی توجہ مبذول کرنے کے لئے تلنگانہ کے تمام اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے بیداری پیدا کی جائے گی اور بس یاترا بھی نکالی جائے گی۔ اس اجلاس میں محمد عبدالہادی ، محمد عزیز احمد اور دیگر نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT