Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ آئی ٹی شعبہ کیلئے فنڈ جاری کرنے مرکز پر زور

تلنگانہ آئی ٹی شعبہ کیلئے فنڈ جاری کرنے مرکز پر زور

مالی امداد کے وعدہ کو پورا کرنے میں غیرمعمولی تاخیر ، کے ٹی آر کا بیان

حیدرآباد۔ 13 اگست (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ نے آج ورکرس پر زور دیا کہ وہ تلنگانہ کے آئی ٹی شعبہ کیلئے فنڈس جاری کرے ۔ مرکز نے چار سال کیلئے انفارمیشن ٹیکنالوجی انوسٹمنٹ ریجن (آئی ٹی آئی آر) کیلئے فنڈ جاری کرنے کا وعدہ کیا تھا۔ وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے آج مرکزی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی روی شنکر پرساد کو مکتوب لکھ کر اس سلسلے میں توجہ دلائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2013ء میں منظورہ پراجیکٹ کیلئے مالی اعانت کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن اس رقم کو جاری کرنے میں غیرمعمولی تاخیر کی گئی ہے۔ مرکز نے تلنگانہ میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کو فروغ دینے کیلئے سرمایہ کاری کا وعدہ کیا تھا تاکہ تلنگانہ میں آئی ٹی صنعت کو ترقی دی جاکر الیکٹرانک ہارڈویئر سیکٹر کو بھی فروغ دیا جاسکے۔ کے ٹی راما راؤ نے کہا کہ مرکز نے 2010ء میں زائد از 202 مربع کیلومیٹر آئی ٹی آئی آر کو فروغ دینے کیلئے تجویز پیش کی تھی۔ مرکز نے ستمبر 2013ء میں اس پراجیکٹ کیلئے باقاعدہ منظوری بھی دی تھی۔ بعدازاں آئی ٹی آئی آر کے لئے تفصیلی پراجیکٹ رپورٹ مرکز کو دو مرتبہ پیش کی گئی ہے اور اس سے 4,863 کروڑ روپئے کے فنڈ کی خواہش کی گئی تھی۔ مرکز نے 3,275 کروڑ روپئے کی مالی اعانت سے اتفاق کیا تھا۔ راما راؤ نے متواتر توجہ دہانی کے بعد یہ مکتوب لکھا ہے اس کے باوجود بھی فنڈ جاری نہیں کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے آئی ٹی برآمدات میں اضافہ ہوا ہے اور گزشتہ تین سال سے ریاست تلنگانہ ملک کے اوسطاً شرح پیداوار میں آگے ہے۔ انہوں نے مرکز پر زور دیا کہ وہ آئی ٹی آئی آر کے تحت وہ مختلف انفراسٹرکچر پراجیکٹس کیلئے فنڈ جاری کرے۔

TOPPOPULARRECENT