Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ اسمبلی اجلاس میں 12 فیصد مسلم تحفظات مسئلہ کو اٹھایا جائے گا

تلنگانہ اسمبلی اجلاس میں 12 فیصد مسلم تحفظات مسئلہ کو اٹھایا جائے گا

دیگر 18 مسائل کو بھی پیش کرنے کی حکمت ، قائد اپوزیشن کے جانا ریڈی کا بیان،حکومت پر چلو اسمبلی ریالی کو ناکام بنانے کی کوشش کا الزام
حیدرآباد ۔ 26 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن کے جانا ریڈی نے 12 فیصد مسلم تحفظات کے بشمول 18 عوامی مسائل کو اسمبلی اور کونسل میں موضوع بحث بنانے کا اعلان کیا ۔ کانگریس کی 27 اکٹوبر کو منظم ہونے والی چلو اسمبلی احتجاجی ریالی کو ناکام بنانے کی کوشش کرنے کا حکومت پر الزام عائد کیا ۔ کانگریس قائدین کو 2 دن قبل ہی گرفتار کرنے یا گھروں پر نظر بند کرنے کی سخت مذمت کی ۔ آج سی ایل پی آفس اسمبلی میں کانگریس کے ارکان اسمبلی ارکان قانون ساز کونسل کا اجلاس منعقد ہوا جس میں قائدین مقننہ کے جانا ریڈی ( اسمبلی ) محمد علی شبیر ( کونسل ) نے شرکت کی ۔ اجلاس کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کے جانا ریڈی نے کہا کہ ٹی آر ایس کے انتخابی منشور میں جو وعدے کئے گئے اس پر آج تک عمل آوری نہیں ہوئی جس میں مسلمانوں اور قبائلوں کو 12 فیصد تحفظات بھی شامل ہیں ۔ چیف منسٹر نے تحفظات کے معاملے میں مسلمانوں اور قبائلوں کو دھوکہ دیا ہے ۔ کانگریس پارٹی اسمبلی کے سرمائی سیشن کے دوران اس کو موضوع بحث بناتے ہوئے وعدوں کی عمل آوری کے لیے حکومت پر دباؤ ڈالے گی ۔ اس کے علاوہ کسانوں ، بافندوں کے مسائل ، آبپاشی پراجکٹس ، مشن بھاگیرتا ، مشن کاکتیہ کی بے قاعدگیوں ، لا اینڈ آرڈر کی ابتر صورتحال ، پسماندہ طبقات پر حملے ، گینگسٹر نعیم انکاونٹر ، میاں پور اراضی اسکام ، منشیات کا ریاکٹ ، بیروزگاری ، فیس ری ایمبرسمنٹ ، شہر حیدرآباد کی سڑکوں کی خستہ حالت ، فلاح و بہبود ، دلتوں میں 3 ایکڑ اراضی کی تقسیم ، ڈبل بیڈ روم مکانات ، کاشت کو اقل ترین قیمت کی فراہمی ، ایس سی ایس ٹی ڈیولپمنٹ کے لیے اسپیشل فنڈز کی عدم اجرائی ، بھیڑ بکریوں اور مچھلیوں کی تقسیم کے بے قاعدگیاں ، بی سی سب پلان ، سلف ہیلپ گروپ خواتین کے مسائل ، صحت عامہ ، جی ایس ٹی ، اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ، عوامی تقسیم نظام ، ملازمین کے مسائل کو موضوع بحث بنائے گی ۔ قائد اپوزیشن کے جانا ریڈی نے کہا کہ کانگریس پارٹی عوامی مسائل کو موضوع بحث بنانے کے معاملے میں اپوزیشن کا تعمیری رول ادا کررہی ہے ۔ کسانوں کے مسائل کو حکومت سے رجوع کرنے کے لیے 27 اکٹوبر کو گاندھی بھون تا اسمبلی ریالی منظم کررہی ہے ۔ لیکن حکومت اس ریالی کو ناکام بنانے کی سازش کررہی ہے ۔ ریالی میں شرکت کرنے والے کانگریس قائدین کو اضلاع میں دو دن قبل سے گرفتار کررہی ہے یا انہیں گھروں پر نظر بند کررہی ہے ۔ ریاستی وزیر امور مقننہ ہریش راؤ ریالی پر شکوک کا اظہار کرتے ہوئے صورتحال بگڑتی ہے تو اس کے لیے کانگریس کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے حکومت کی سازش کا اظہار کررہے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT