Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ اسمبلی میں گورنر کا خطبہ جھوٹ کا پلندہ

تلنگانہ اسمبلی میں گورنر کا خطبہ جھوٹ کا پلندہ

امیری کا خواب دکھا کر فقیر بنادیا گیا، تلنگانہ تلگودیشم کا ردعمل

حیدرآباد ۔ 12 مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ تلگودیشم پارٹی نے گورنر کے خطبہ کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ گورنر کو مکمل سیکوریٹی حاصل ہے۔ اس لئے وہ ریاست میں لاء اینڈ آرڈر بہتر ہونے کا دعویٰ کررہے ہیں۔ آج اسمبلی کے میڈیا پوائنٹ پر خطاب کرتے ہوئے تلگودیشم کے رکن اسمبلی بی کرشنیا نے کہا کہ گورنر کا خطبہ مایوس کن ہے۔ ریاست کے مختلف محکمہ جات میں 2 لاکھ جائیدادیں مخلوعہ ہیں۔ گورنر کے خطبہ میں تقررات کا کوئی تذکرہ نہیں کیا گیا۔ اضلاع کی تنظیم جدید کے بعد نئے اضلاع کے سرکاری دفاتر میں فرنیچر کی قلت ہے۔ بی سی طبقات کیلئے سوائے ایم پی سی کارپوریشن کے دوسرے فیڈریشن کا کوئی تذکرہ نہیں کیا گیا۔ امیری کا خواب دکھا کر بی سی طبقات کو فقیر بنادیا گیا۔ گورنر نے لا اینڈ آرڈر بہتر ہونے کاتذکرہ کیا ہے۔ گورنر کی سیکوریٹی بڑھا دینے پر انہیں لا اینڈ آرڈر بہتر نظر آرہا ہے جبکہ حقیقت یہ ہیکہ دھرنا چوک برخواست کردیا گیا ہے۔ ریاست میں کسی کو احتجاج کرنے، ریالیاں اور جلسے منظم کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔ ریاست میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہورہی ہے اور دستور کے ساتھ مذاق کیا جارہا ہے۔ تلگودیشم کے رکن اسمبلی وینکٹ ویریا نے کہا کہ ڈبل بیڈ روم مکانات، کے جی تا پی جی مفت تعلیم، کسانوں کی کاشت پر اقل ترین قیمت مجاہدین تلنگانہ کے ارکان خاندان سے انصاف کرنے دلت طبقات کو تین ایکر اراضی دینے کا گورنر کے خطبہ میں کوئی تذکرہ نہیں کیا گیا جس کی تلگودیشم پارٹی سخت مذمت کرتی ہے اور اسمبلی کے بجٹ سیشن میں عوام کے مسائل کو موضوع بنانے کا کوئی بھی موقع ضائع نہیں کرے گی۔ مسلمانوں اور قبائلوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا گیا مگر 4 سال بعد بھی وعدے کو پورا نہیں کیا گیا جس کو بھی تلگودیشم پارٹی موضوع بحث بنائے گی۔

TOPPOPULARRECENT