Wednesday , January 17 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں اقلیتوں کی اسکیمات کیلئے مرکز سے فنڈ کی اجرائی کا تیقن

تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں اقلیتوں کی اسکیمات کیلئے مرکز سے فنڈ کی اجرائی کا تیقن

جائنٹ سکریٹری مرکزی وزارت اقلیتی بہبود راکیش موہن ریڈی کا دونوں ریاستوں کے علحدہ اجلاس سے خطاب

جائنٹ سکریٹری مرکزی وزارت اقلیتی بہبود راکیش موہن ریڈی کا دونوں ریاستوں کے علحدہ اجلاس سے خطاب
حیدرآباد۔/22جنوری، ( سیاست نیوز) مرکزی وزارت اقلیتی اُمور نے تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں اقلیتوں کی بھلائی سے متعلق مرکزی اسکیمات میں مناسب حصہ داری اور درکار فنڈز کی اجرائی کا تیقن دیا ہے۔ مرکزی وزارت اقلیتی بہبود میں جوائنٹ سکریٹری مسٹر راکیش موہن نے آج تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے محکمہ اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کے ساتھ علحدہ علحدہ اجلاس منعقد کرتے ہوئے مرکزی اور ریاستی اسکیمات کا جائزہ لیا۔ انہوں نے دونوں وزارتوں کے سکریٹریز کو مشورہ دیا کہ وہ نئی مرکزی اسکیمات میں انہیں مناسب حصہ داری کے سلسلہ میں تجاویز روانہ کریں۔ مسٹر راکیش موہن نے اقلیتی طلبہ کیلئے مرکز کی پری میٹرک اسکالر شپ کے تمام درخواست گذاروں کو اسکالر شپ کی اجرائی یقینی بنانے اور دونوں ریاستوں کے کوٹہ میں اضافہ پر ہمدردانہ غور کا یقین دلایا۔ مرکزی وزارت اقلیتی بہبود کے عہدیدار نے حیدرآباد کے ایک روزہ دورہ کے موقع پر دونوں ریاستوں کے اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد کیا۔ انہوں نے تلنگانہ میں اقلیتی بہبود کے سلسلہ میں بجٹ میں اضافہ کو خوش آئند قرار دیا اور امید ظاہر کی کہ محکمہ اقلیتی بہبود مقررہ مدت میں مکمل بجٹ کے خرچ کو یقینی بنائے گا۔ انہوں نے تلنگانہ میں اقلیتی بہبود سے متعلق حکومت کی اعلان کردہ نئی اسکیمات کا بھی خیرمقدم کیا۔ راکیش موہن نے کہا کہ تلنگانہ اور آندھرا پردیش کی حکومتیں اقلیتی بہبود میں سنجیدہ ہے لہذا مرکزی حکومت ہر ممکن تعاون کرے گی۔ تلنگانہ اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کے ساتھ منعقدہ جائزہ اجلاس میں اسپیشل سکریٹری جناب سید عمر جلیل، ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب جلال الدین اکبر، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن پروفیسر ایس اے شکور، منیجنگ ڈائرکٹر کرسچین فینانس کارپوریشن مسٹر نکولس اور چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ مسٹر سلطان محی الدین اور دوسرے موجود تھے جبکہ آندھرا پردیش حکومت کے انچارج سکریٹری اقلیتی بہبود جناب شیخ محمد اقبال اور دیگر عہدیداروں کے ساتھ علحدہ اجلاس منعقد کیا گیا۔ اجلاس میں تلنگانہ حکومت کی جانب سے اقلیتی بہبود کی اسکیمات اور ان کے نشانوں کی تکمیل کے بارے میں پاور پوائنٹ پریزنٹیشن پیش کیا گیا۔ تلنگانہ حکومت نے مرکزی اسکیمات کے سلسلہ میں پیشرفت سے واقف کرایا اور کہا کہ کئی اسکیمات کے سلسلہ میں مرکز سے مزید تعاون درکار ہے۔ عہدیداروں نے بتایا کہ مرکز کی پری میٹرک اسکالر شپ کے سلسلہ میں جو نشانہ مقرر کیا گیا ہے اس سے ہر سال کئی ہزار طلبہ اسکالر شپ کے حصول سے محروم ہیں۔ مسٹر راکیش موہن نے اس سلسلہ میں بجٹ میں اضافہ اور پوسٹ میٹرک اسکالر شپ کے بقایا کی رقم کو پری میٹرک کے تحت منتقل کرنے کی تجویز سے اتفاق کیا اور سکریٹری اقلیتی بہبود کو اس سلسلہ میں تجویز روانہ کرنے کی ہدایت دی۔ انہوں نے بتایا کہ جاریہ سال مرکز کی جانب سے اقلیتی بہبود کا 91فیصد بجٹ جاری کردیا گیا ہے۔ انہوں نے مرکز کی نئی اسکیمات جیسے سیکھو اور کماؤ، نئی روشنی، استاد، نئی اُڑان اور ہماری دراہر کی تفصیلات سے واقف کرایا اور دونوں ریاستوں میں ان پر موثر انداز میں عمل آوری کی خواہش کی۔ ’ سیکھو اور کماؤ‘ اسکیم کے تحت اقلیتی افراد کو پیشہ ورانہ کورسیس کی ٹریننگ کا اہتمام کیا جاتا ہے جبکہ ’ نئی روشنی‘ اسکیم تعلیمی ترقی سے متعلق ہے جس میں مدارس سے تعلق رکھنے والے طلبہ کو برج کورسیس کے ذریعہ دسویں تا بارہویں جماعت کے معیار کے مطابق تعلیم کا اہتمام کیا جاتا ہے۔ ’ استاد ‘ اسکیم کے تحت مختلف قدیم پیشوں میں ٹریننگ کا اہتمام کیا جائے گا جس میں بیدری کام، چوڑی سازی اور دیگر گھریلو صنعتیں شامل ہوں گی۔ ’ نئی اُڑان ‘ اسکیم کے تحت سیول سرویسس اور گروپ امتحانات کی تیاری کے سلسلہ میں اقلیتی طلبہ کو ٹریننگ کا مکمل خرچ مرکزی حکومت برداشت کرے گی۔ ’ ہماری دراہر‘ اسکیم کا مقصد قدیم اور تاریخی مخطوطات اور نسخوں کا تحفظ کرنا ہے۔ اس کے تحت دائرہ المعارف میں موجود مخطوطات اور تاریخی کتب کے تحفظ کے اقدامات کئے جائیں گے۔ مرکزی حکومت کے عہدیدار نے اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے اقدامات کے سلسلہ میں بھی تفصیلات حاصل کی۔ انچارج سکریٹری آندھرا پردیش جناب شیخ محمد اقبال نے آندھرا پردیش حکومت کے اقلیتی بہبود بجٹ اور اسکیمات کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT