Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ اپوزیشن کے کسانوں پر مگرمچھ کے آنسو

تلنگانہ اپوزیشن کے کسانوں پر مگرمچھ کے آنسو

ماضی کی حکومتیں اصل ذمہ دار، ٹی آر ایس ایم ایل سی کے پربھاکر کا بیان
حیدرآباد۔/12ستمبر، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے اپوزیشن جماعتوں پر کسانوں کے حق میں مگر مچھ کے آنسو بہانے کا الزام عائد کیا۔ پارٹی کے رکن قانون ساز کونسل کے پربھاکر نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کانگریس، تلگودیشم اور بی جے پی قائدین کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور تلگودیشم نے اپنے دور اقتدار میں کبھی بھی کسانوں کی بھلائی پر توجہ نہیں دی۔ ان دونوں پارٹیوں کے اقتدار کے دوران ہزاروں کسانوں نے خودکشی کی لیکن حکومتیں خودکشی کے واقعات کو روکنے میں ناکام ثابت ہوئیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے کسانوں کی بھلائی کیلئے کئی اقدامات کئے ہیں۔ انہوں نے کسانوں کی ہمدردی کے سلسلہ میں کانگریس اور تلگودیشم قائدین کے بیانات پر حیرت کا اظہار کیا اور کہا کہ جن پارٹیوں کی حکومتوں نے کسانوں پر فائرنگ کی اور لاٹھی چارج کیا وہ آج مگر مجھ کے آنسو بہارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسائل کی یکسوئی کیلئے احتجاج کرنے والے کسانوں کے خلاف مقدمات درج کئے گئے اور انہیں جیلوں میں بند کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ اس نے کسانوں کے 17ہزار کروڑ کے بقایا جات کو معاف کردیا ہے۔ ملک کی کوئی اور ریاست اس طرح کی مثال پیش نہیں کرسکتی۔ پربھاکر نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ عوام کی بھلائی کیلئے دن رات محنت کررہے ہیں اور زرعی شعبہ کی ترقی اور ریاست سے خشک سالی کے مستقل خاتمہ کیلئے کئی اسکیمات کا آغاز کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ 46ہزار سے زائد چھوٹے تالابوں اور جھیلوں کے تحفظ کیلئے مشن کاکتیہ پروگرام شروع کیا گیا تاکہ خشک سالی کا مستقل طور پر خاتمہ کیا جاسکے۔ پربھاکر نے کہا کہ کانگریس اور تلگودیشم دور حکومت میں 26ہزار سے زائد کسانوں نے خودکشی کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں حکومت کے اقدامات کی ستائش کے بجائے کسانوں کی اموات کے بعض واقعات پر سیاست کررہے ہیں لیکن عوام ان کے بہکاوے میں آنے والے نہیں۔

TOPPOPULARRECENT