Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ ایمسیٹ نتائج کا اعلان ، میڈیسن میں کڑپہ کو پہلا مقام

تلنگانہ ایمسیٹ نتائج کا اعلان ، میڈیسن میں کڑپہ کو پہلا مقام

حیدرآباد ، رنگاریڈی 4 اور آندھرا کے 6 امیدواروں نے ٹاپ 10 رینکس حاصل کئے
حیدرآباد۔ 26 مئی (سیاست نیوز) تلنگانہ ایمسیٹ 2016ء کے نتائج کا آج اعلان کردیا گیا۔ حیدرآباد اور رنگاریڈی کے 4 طلبہ نے ٹاپ چار رینکس حاصل کئے جبکہ 10 کے منجملہ مابقی 6 رینکس آندھرا پردیش کے طلبہ کو حاصل ہوئے۔ ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر کڈیم سری ہری نے سیکریٹریٹ میں پریس کانفرنس کے دوران نتائج جاری کئے۔ تلنگانہ اضلاع کی تین طالبات نے ٹاپ 3 اگریکلچرل اور متعلقہ رینکس حاصل کئے جبکہ ٹاپ 10 مابقی 7 رینکس آندھرا پردیش کے طلبہ کو حاصل ہوئے۔ ایمسیٹ میں انجینئرنگ کورس میں 1,33,428 امیدواروں کے منجملہ 1,03,923 امیدوار شریک ہوئے۔ اسی طرح میڈیکل اور متعلقہ کورسیس میں داخلوں کیلئے 90,114 کے منجملہ 75,681 امیدوار اہل قرار دیئے گئے۔ انجینئرنگ کورسیس کے نتائج کا اوسط 77.88% اور میڈیسن و اگریکلچر کا اوسط 83.98% رہا۔ مسٹر کڈیم سری ہری نے بتایا کہ 15 مئی کو ایمسیٹ منعقد کیا گیا اور اندرون گیارہ یوم نتائج کا اعلان کرتے ہوئے ایک ریکارڈ قائم کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ ابتدائی مرحلے میں تمام امیدواروں کے او ایم آر شیٹس بھی ویب سائیٹ پر پیش کردیئے گئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ نتائج کے اعلان میں پوری طرح شفافیت کا مظاہرہ کیا گیا۔ میڈیسن کے 10 ٹاپرس میں 4 طالبات اور 6 طلباء ہیں۔ کڑپہ کے بوجا پردیپ ریڈی نے پہلا رینک حاصل کیا جبکہ مریال گوڑہ نلگنڈہ کی پرتیوشا کو دوسرا رینک حاصل ہوا۔ محمد ارباز (وجئے واڑہ) نے تیسرا، ذیشان احمد جلیلی (حیدرآباد) نے چھٹا مقام حاصل کیا۔ انجینئرنگ میں ٹی سائی تیجا (کوکٹ پلی رنگاریڈی) کو پہلا رینک حاصل ہوا۔ ابتدائی 10 رینکس میں صرف ایک ہی طالبہ ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ایمسیٹ انجینئرنگ میں 14,418 اقلیتی امیدواروں نے شرکت کی جس میں 12,908 مسلم طلباء و طالبات کے منجملہ 7076 نے کامیابی حاصل کی۔ اسی طرح میڈیسن میں 12,689 اقلیتی طبقات سے تعلق رکھنے والوں نے حصہ لیا۔ مسلم طلباء و طالبات کی تعداد 11,227 رہی جن کے منجملہ 8,506 نے کامیابی حاصل کی۔

TOPPOPULARRECENT