Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ بی جے پی قائدین ‘ تلگودیشم سے اتحاد کے مخالف

تلنگانہ بی جے پی قائدین ‘ تلگودیشم سے اتحاد کے مخالف

مفاہمت کی صورت میں پارٹی سے مستعفی ہوجانے کا انتباہ : سینئر قائدین کی آمد

مفاہمت کی صورت میں پارٹی سے مستعفی ہوجانے کا انتباہ : سینئر قائدین کی آمد
حیدرآباد 5 اپریل ( پی ٹی آئی ) تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے بی جے پی قائدین نے آج ‘ تلگودیشم پارٹی کے ساتھ کسی انتخابی مفاہمت کی مخالفت کی اور مبینہ طور پر انتباہ دیا کہ اگر یہ مفاہمت ہوتی ہے تو وہ پارٹی سے سبکدوش ہوجائیں گے ۔ اس دوران بی ج پی مرکزی قیادت نے نشستوں کی تقسیم پر تلگودیشم کے ساتھ بات چیت کی ۔ تلنگانہ میں بی جے پی ضلع یونٹس کے سربراہوں نے آج پارٹی کے قومی ترجمان پرکاش جاوڈیکر سے کہا کہ اگر تلگودیشم کے ساتھ انتخابات کیلئے کسی طرح کی مفاہمت کی گئی تو وہ پارٹی سے مستعفی ہوجائیں گے ۔ تلنگانہ بی جے پی کے صدر جی کشن ریڈی نے انہیں منانے کی کوشش کی اور یہ کہا کہ پارٹی کی مرکزی قیادت کی جانب سے اس تعلق سے کوئی مناسب فیصلہ کیا جائیگا ۔ پرکاش جاوڈیکر اور سینئر لیڈر نریش گجرال اور جی ستیش آج صبح حیدرآباد پہونچے تاکہ تلگودیشم کے ساتھ نشستوں کی تقسیم پر بات چیت ہوسکے ۔ تلگودیشم کے سینئر قائدین بھی بی جے پی قائدین کے ساتھ چندرا بابو نائیڈو کی قیامگاہ پر بات چیت میں موجود تھے ۔ پارٹی آفس پر تلنگانہ کے ضلع بی جے پی صدور کا ایک علحدہ اجلاس منعقد ہوا جس میںاس مفاہمت کی مخالفت کی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں تلگودیشم اپنی طاقت کا زیادہ اندازہ لگا رہی ہے ۔ حقیقت میں تلگودیشم کے ساتھ بی جے پی کی مفاہمت کی صورت میں بی جے پی کو ہی نقصان ہوگا ۔ کہا گیا ہے کہ دس کے منجملہ سات اضلاع کے بی جے پی صدور نے تلگودیشم سے مفاہمت کی صورت میں پارٹی سے مستعفی ہوجانے کا انتباہ دیا ہے ۔ اس صورتحال پر پرکاش جاوڈیکر پارٹی آفس پہونچے اور ان قائدین کو منانے کی کوشش کی ۔ اس موقع پر سینئر لیڈر مسٹر بنڈارو دتاتریہ بھی موجود تھے ۔ جی کشن ریڈی نے کہا کہ وہ اس مسئلہ پر مرکزی قائدین سے بات چیت کرینگے ۔ رات تک تلگودیشم ۔ بی جے پی اتحاد کے تعلق سے کوئی باضابطہ اعلان نہیں ہوسکا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT