Saturday , October 20 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ تحریک کے طرز پر آزادی فلسطین کی تحریک بھی کامیاب ہوگی

تلنگانہ تحریک کے طرز پر آزادی فلسطین کی تحریک بھی کامیاب ہوگی

انڈو عرب لیگ کا جلسہ یوم اظہار یگانگت فلسطین، نرسمہاریڈی اور دیگر کا خطاب

حیدرآباد۔16ڈسمبر(سیاست نیوز) وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی نے تلنگانہ کی جانب سے فلسطینی عوام کے ساتھ انصاف او ر ان کی آزادی کے لئے کی جانے والی جدوجہد میںہر ممکن تعاون کا یقین دلاتے ہوئے کہاکہ آزادی فلسطین اور علیحدہ تلنگانہ کی جدوجہد میں کوئی فرق نہیں ہے اور مجھے پورا یقین ہے جس طرح علیحدہ تلنگانہ کی جدوجہد کامیاب ہوئی ہے اسی طرح آزادی فلسطین کی جدوجہد بھی کامیاب ہوگی۔ پچھلے ستر سالوں سے حکومت ہند فلسطین کی آزادی کے لئے کی جانے والی جدوجہد کے ساتھ ہے ۔ موجودہ حالات میںبھی حکومت ہند نے فلسطین کے تئیں اپنے سابق موقف کی برقراری کا اعلان کیا۔انہو ںنے کہاکہ بغیرکسی تنازعہ کے پرامن انداز میں مسئلہ فلسطین کا حاصل ہونا چاہئے ۔مسٹر نرسمہا ریڈی آج یہاں انڈو عرب لیگ حیدرآباد کے زیر اہتمام منعقدہ انڈو فلسطین یوم اظہار یگانگت سے خطاب تھے۔ نگرانی صدر انڈوعرب لیگ جناب سید وقار الدین نے کی جبکہ فلسطینی سفیر برائے ہند مسٹر عدنان ابوالہاجہ ‘ تونسیائی سفیر برائے ہند جناب نجم الدین لاکھا‘ الجریائی سفیر برائے ہند حمزہ یحییٰ ‘ سابق مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ ‘ سی پی آئی کے قومی سکریٹری ایس سدھاکر ریڈی‘ سابق ایم پی سی پی آئی جناب سید عزیز پاشاہ ‘ سابق رکن پارلیمنٹ تلگودیشم آر چندرشیکھر ‘ پروفیسر پونیا‘ امیرجماعت اسلامی ہند تلنگانہ واڑیسہ مولانا حامد محمد خان‘ مولانا حافظ پیر شبیراحمد صدر جمعیت العلماء گریٹر حیدرآباد‘ جناب ظفر جاوید‘جسٹس ومن رائو اور دیگر نے بھی اس یوم اظہار یگانگت سے خطاب کیا۔مسٹر نرسمہا ریڈی نے سلسلہ خطاب کو جاری رکھتے ہوئے کہاکہ انڈوعرب لیگ کی جانب سے فلسطینی عوام کے اظہار یگانگت اور ان کی آزادی کی جدوجہد کے لئے منعقد کئے جانے والے ہر پروگرام کوحکومت کی تائید حاصل رہے گی۔ فلسطینی عوام کے لئے آزاد مملکت کا قیام ضروری ہے۔ فلسطینی سفیر برائے ہند مسٹر عدنان ابو الہاجہ نے امریکی صدر ڈونالڈ جے ٹرمپ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کا دارالخلافہ تسلیم کرتے ہوئے امریکی سفار ت خانہ کی تل ابیب سے یروشلم منتقلی کے اعلان کی شدید مذمت کی ۔ انہوں نے امریکی صدر پر اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل میں فلسطین کے متعلق پیش کی گئی قرارداد کی خلا ف ورزی کا بھی الزام عائد کیا۔ انہو ں نے کہاکہ امریکہ کے متنازعہ اعلان کے بعد جو ردعمل سارے دنیانے پیش کیاہے وہ قابل ستائش ہے ۔ انہو ںنے فلسطینی عوام کے لئے انڈو عرب لیگ کی خدمات کو بھی ناقابل فراموش قراردیا۔سابق مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ نے کہاکہ وہ وزیراعظم نریندر مودی سے اس ضمن میںملاقات کرتے ہوئے انڈو عرب لیگ کی جانب سے فلسطینی عوام کی حمایت میںمنعقد کئے گئے اس تقریب کا حوالہ دیں گے اور فلسطینی عوام کے ساتھ انصاف کو یقینی بنانے کے لئے حکومت ہند کے سخت موقف پیش کرنے کا مطالبہ کریں گے ۔سی پی آئی قومی سکریٹری سدھاکر ریڈی نے حکومت ہند کے بیان پر افسوس کا اظہار کیا۔ انہو ںنے کہاکہ ہونا تو یہ چاہئے تھاکہ وزیراعظم نریندر مودی امریکی صدر کے بیان کی مذمت کرتے ۔سفارت خانہ کی تبدیلی اور یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے متعلق بیان پر وزیراعظم نے کچھ نہیںکہا ہے جو قابل افسوس ہے۔ مولانا حامد محمد خان نے فلسطین کے مسئلہ پر عرب ممالک کو منافقانہ رویہ اختیار کرنے کے بجائے کھل کر اسرائیل کی مخالفت کرنے کا مطالبہ کیا۔انہوں نے مسلمانوں سے بھی امریکہ او راسرائیلی اشیاجات کے بائیکاٹ کرنے کی اپیل کی۔جناب سید عزیز پاشاہ نے کہاکہ ٹرمپ کے فیصلے کے ساتھ ہی دنیا بھر میںامن پسندوں نے فلسطینی عوام کے ساتھ اظہار یگانگت میںاحتجاج کیاہے۔ انہو ںنے کہاکہ دنیا کا بڑا حصہ امریکی فیصلے کو تسلیم کرنے سے انکار کررہا ہے۔ اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل میںشامل بیشتر ممالک امریکی فیصلے کے خلاف ہیں۔ریاستی وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی کی موجودگی میںانڈوعرب لیگ کے چیرمن سید وقار الدین نے اس موقع پر فلسطینی عوام کی امداد کے لئے پچیس لاکھ روپئے کا چیک بطور عطیہ فلسطینی سفیر مسٹر عدنان ابو الہاجہ کو پیش کیا۔شہر حیدرآباد کی مذہبی سماجی او رسیاسی تنظیموں سے وابستہ سرکردہ شخصیتوں کی کثیر تعداد نے اس تقریب میںشرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT