Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ ‘ترقیاتی و فلاحی کاموں میں ملک بھر میں سر فہرست

تلنگانہ ‘ترقیاتی و فلاحی کاموں میں ملک بھر میں سر فہرست

اراضی سروے ‘ کے سی آر کٹس و آبپاشی پروگرام کی ستائش ۔ مشیر مرکزی محکمہ فینانس اروند سبرامنین
حیدرآباد۔19 فبروری ( سیاست نیوز) مشیر مرکزی محکمہ فینانس اروند سبرامنین نے حکومت تلنگانہ کی مختلف اسکیمات اراضی سروے اور زرعی سرمایہ کاری کے علاوہ دوسری اسکیمات کی ستائش کی ۔ ترقیاتی ‘ تعمیری و فلاحی کاموں میں تلنگانہ سارے ملک میں سرفہرست ہونے کا دعویٰ کیا ۔ اروند سبرامنین نے آج چیف منسٹر کے سی آر سے ملاقات کی اور کہا کہ تلنگانہ حکومت نے مختصر عرصہ میں جو اقدامات کئے ہیں وہ ناقابل فراموش ہیں ۔ اراضی سروے ‘ کے سی آر کٹس ‘ لفٹ اریگیشن اقدامات کی تعریف کی ‘ کسانوں کیلئے متعارف کی جانے والی زرعی سرمایہ کاری اسکیم کو منفرد کارنامہ قرار دیتے ہوئے کسانوں میں چیکس تقسیم کرنے کے پروگرامس میں حصہ لینے کی خواہش کا اظہار کیا ۔ اس اسکیم کا تفصیلی جائزہ لیتے ہوئے اس کو سارے ملک میں عمل کے قابل بنانے اور چیکس تقسیم کے دن 20اپریل کو قومی پروگرام کے طور پر منانے کا مشورہ دیا ۔ تلنگانہ میں امن و امان پر خصوصی توجہ دینے پر بھی مسرت کا اظہار کیا ۔ ہر لحاظ سے تلنگانہ سارے ملک میں سرفہرست ہے ۔ سال 2013-14ء میں متحدہ آندھراپردیش کا بجٹ 1.36 لاکھ کروڑ تھا ۔ 2017-18ء میں علحدہ تلنگانہ کا بجٹ 1.49 لاکھ کروڑ تک پہنچ گیا ہے ۔ اروند سبرامنین نے کہا کہ اتنی تیزی سے ترقی کرنے والی ریاست میں معاون و مددگار ثابت ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ ریاستوں کی ترقی سے ملک کی ترقی ممکن ہے ۔ ریاستوں کی ترقی میں رکاوٹیں پیدا کرنے سے ملک ترقی سے محروم ہوسکتا ہے ۔ تلنگانہ ایک زرعی ریاست ہے ‘کسانوں کی ترقی سے ریاست کی ترقی ہوسکتی ہے ‘ یہ ان کا مکمل ایقان ہے ۔ چیف منسٹر کے سی آر نے بتایا کہ زرعی شعبہ کو ترقی دینے اور کسانوں کی فلاح و بہبود کیلئے ریاست میں بڑے پیمانے پر اصلاحات لائے گئے ۔ زرعی شعبہ کو فروغ دینے کیلئے زیادہ سے زیادہ فنڈز مختص کئے جارہے ہیں ۔ دریائے کرشنا اور گوداوری کے پانی میں تلنگانہ کی حصہ داری صرف کاغذ تک محدود ہے ۔ زرعی شعبہ کیلئے مختص کئے جانے والی اقل ترین قیمت پر نظرثانی کرنے پر زور دیا ۔ دھان اور گیہوں کو کم از کم 2,200 ‘ جوار کو 2ہزار روپئے اقل ترین قیمت مقرر کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ۔ بھیڑ بکریوں ‘مچھلیوں اور مرغیوں کی افزائش کو ٹیکس سے استثنیٰ دینے مقامی اداروں کو مکمل فنڈز جاری کرنے اور فنڈز کی اجرائی کے معاملہ میں تلنگانہ سے فراخدلی کا مظاہرہ کرنے پر زور دیا اور انہیں بتایا کہ تلنگانہ کے بینکس اور اے ٹی ایم میں فنڈز کی قلت پیدا ہوگئی ہے اس کو فوری دور کرنے کا مطالبہ کیا ۔

TOPPOPULARRECENT