Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ تلگودیشم قائدین کو پارٹی سے مستعفی ہونے کا مشورہ

تلنگانہ تلگودیشم قائدین کو پارٹی سے مستعفی ہونے کا مشورہ

چندرا بابو تلنگانہ کے دشمن، وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ کا الزام

چندرا بابو تلنگانہ کے دشمن، وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ کا الزام
حیدرآباد /19 مارچ (سیاست نیوز) ریاستی وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے صدر تلگودیشم و چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو کو تلنگانہ کا دشمن قرار دیا۔ آج کونسل میں وقفہ سوالات کے دوران کانگریس کے رکن پی سدھاکر ریڈی کی جانب سے پولاورم پراجکٹ کی بلندی سے متعلق سوال کا جواب دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت چندرا بابو نائیڈو کے ناپاک عزائم کو کامیاب نہیں ہونے دے گی، نہ ہی ڈیم کی بلندی میں اضافہ کی اجازت دے گی اور اگر ضرورت پڑی تو کل جماعتی وفد کے ساتھ دہلی پہنچ کر وزیر اعظم سے نمائندگی کرے گی۔ انھوں نے کہا کہ تلگودیشم من مانی کر رہی ہے، جب کہ یہ مسئلہ سپریم کورٹ میں زیر دوران ہے اور بچاوت ٹریبونل کے احکامات بھی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ کل مسٹر نائیڈو نے آندھرا پردیش اسمبلی میں کہا ہے کہ ضلع کھمم کے سات منڈلوں کو آندھرا پردیش میں شامل کرنا ان کا کارنامہ ہے، جب کہ انھوں نے وزیر اعظم نریندر مودی سے مذاکرات کے بعد فیصلہ ہونے کا ادعا کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ تلنگانہ کے تلگودیشم قائدین اب بھی ہوش کے ناخن لیں اور حقائق کو تسلیم کرتے ہوئے تلنگانہ کے مفادات کے تحفظ اور ریاست سے اپنی وفاداری ظاہر کرنے کے لئے اس مسئلہ پر بطور احتجاج تلگودیشم سے مستعفی ہوکر تلنگانہ کی کسی بھی سیاست جماعت میں شامل ہوجائیں یا اپنی نئی پارٹی تشکیل دیں۔ انھوں نے کہا کہ چیف منسٹر آندھرا پردیش نے پٹو سمہا پراجکٹ کی تعمیر کے لئے جی او جاری کرتے ہوئے اسمبلی میں یہ کہا کہ اس پراجکٹ کا تلنگانہ سے کوئی تعلق نہیں ہے، جب کہ جی او میں ذکر کیا گیا ہے کہ یہ پولاورم پراجکٹ کا حصہ ہے، جس پر تلنگانہ حکومت کو سخت اعتراض ہے۔ انھوں نے کہا کہ دریائے گوداوری اور کرشنا کے پانی میں ریاست تلنگانہ کا برابر کا حصہ ہے، تاہم چندرا بابو نائیڈو صرف ایوان ہی کو نہیں بلکہ رائلسیما کے عوام کو بھی دھوکہ دے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT