Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ تلگودیشم پارٹی مزید بحران کا شکار

تلنگانہ تلگودیشم پارٹی مزید بحران کا شکار

ریونت ریڈی کے بعد وی نریندر ریڈی بھی مستعفی، کانگریس میں شمولیت کی افواہ
حیدرآباد ۔ 28 اکٹوبر (سیاست نیوز) ریونت ریڈی کے استعفیٰ کے بعد تلگودیشم کے سینئر قائد سابق رکن اسمبلی وی نریندر ریڈی بھی تلگودیشم پارٹی کی رکنیت سے مستعفی ہوگئے۔ تلگودیشم میں جاری بحران مزید بڑھتا جارہا ہے۔ توقع کے مطابق ریونت ریڈی نے تلگودیشم اور اسمبلی کی رکنیت سے استعفیٰ دے دیا۔ اس کے ایک گھنٹہ بعد تلگودیشم پارٹی کے سابق رکن اسمبلی ایم نریندر ریڈی نے اپنا استعفیٰ پارٹی صدر چندرا بابو نائیڈو کو روانہ کردیا۔ ریونت ریڈی جب دہلی میں تھے اور کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی سے ملاقات کرنے کی افواہیں گشت کررہی تھی، تب وی نریندر ریڈی بھی ریونت ریڈی کے ساتھ دہلی میں موجود تھے۔ واضح رہیکہ ووٹ برائے نوٹ مقدمہ میں بھی وی نریندر ریڈی کے رول پر اے سی بی نے شکوک کا اظہار کیا تھا اور انہیں نوٹس بھی دی گئی تھی۔ یہ افواہیں تیزی سے گشت کررہی ہیکہ ریونت ریڈی کانگریس میں شامل ہونے والے ہیں۔ نریندر ریڈی کے تلگودیشم سے استعفیٰ کے بعد یہ توقع کی جارہی ہیکہ وہ بھی ریونت ریڈی کی تقلید کرسکتے ہیں۔ ریونت ریڈی کی دہلی سے واپسی کے بعد یہ افواہیں بھی گشت کررہی تھی تلنگانہ کے نصف سے زیادہ اضلاع تلگودیشم صدور اور 20 پارٹی کے سینئر قائدین بھی کانگریس میں شامل ہوسکتے ہیں لیکن فی الحال ابھی تک ایک ہی سابق رکن اسمبلی ریونت ریڈی کے نقش قدم پر چلنے کیلئے آگے آئے ہیں۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہیکہ تلنگانہ کے کئی تلگودیشم قائدین اپنے سیاسی مستقبل کو لیکر فکرمند ہیں اور کوئی نہ کوئی فیصلہ کرنے کی حکمت عملی تیار کررہے ہیں۔

 

TOPPOPULARRECENT