Thursday , January 18 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ تلگو دیشم ارکان اسمبلی کو مستعفی ہو کر دوبارہ منتخب ہونے کا چیالنج

تلنگانہ تلگو دیشم ارکان اسمبلی کو مستعفی ہو کر دوبارہ منتخب ہونے کا چیالنج

آندھرائی قائدین کے اشاروں پر حکومت کو تنقید کا نشانہ ، ٹی آر ایس قائدین کا شدید ردعمل

آندھرائی قائدین کے اشاروں پر حکومت کو تنقید کا نشانہ ، ٹی آر ایس قائدین کا شدید ردعمل
حیدرآباد ۔11 ۔مئی (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے تلگو دیشم سے تعلق رکھنے والے تلنگانہ قائدین کی جانب سے حکومت پر کی جارہی تنقیدوں کو مسترد کردیا۔ انہوں نے کہا کہ تلگو دیشم کے تلنگانہ قائدین دراصل تلنگانہ کے دشمن ہیں اور عوام میں مقبولیت حاصل کرنے کیلئے بے بنیاد الزامات عائد کر رہے ہیں۔ ارکان اسمبلی جی بالراجو ، ایس رام لنگا ریڈی اور سی ایچ دھرما ریڈی نے آج اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے تلگو دیشم قائدین ای دیاکر راؤ اور ریونت ریڈی کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ قائدین چندرا بابو نائیڈو کے اشاروں پر مخالف تلنگانہ مہم چلا رہے ہیں ۔ بالراجو نے کہا کہ تلنگانہ حکومت نے کے سی آر کی قیادت میں جو ترقیاتی اقدامات شروع کئے ہیں، اسے تلگو دیشم برداشت نہیں کر پا رہی ہیں، لہذا تنقیدوں کا سہارا لیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنہرے تلنگانہ کی تشکیل کی صورت میں تلنگانہ ریاست میں تلگو دیشم کا مکمل صفایا ہوجائے گا۔ اس اندیشے کے تحت تلگو دیشم حکومت پر تنقیدیں کر رہی ہیں۔ بالراجو نے حکومت کے خلاف مہم پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تلگو دیشم پارٹی دھوکہ دہی کا ریکارڈ رکھتی ہے۔ اس پارٹی نے نہ صرف اپنے بانی این ٹی راما راؤ بلکہ ریاست کے عوام کو دھوکہ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ تلگو دیشم قائدین کو چندرا بابو نائیڈو نے مختلف عہدوں کا لالچ دیا ہے۔ بالراجو نے کہا کہ تلگو دیشم پارٹی کا تلنگانہ میں کوئی مستقبل نہیں ہے اور عوام اس پارٹی سے تعلق رکھنے والوں کو سبق سکھائیں گے۔ سی ایچ دھرما ریڈی نے کہا کہ حکومت کے ترقیاتی اور فلاحی اقدامات پر تلگو دیشم کی تنقیدیں مضحکہ خیز ہیں۔ تلگو دیشم قائدین اپنے آندھرائی آقاؤں کے اشارہ پر حکومت کے خلاف مہم چلا رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں پارٹی کا کوئی وجود نہیں اور اس سے تعلق رکھنے والے عوامی نمائندے حکومت کی کارکردگی سے متاثر ہوکر ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں۔ انہوں نے چیف منسٹر کی ستائش کی اور کہا کہ عوام سے کئے گئے وعدوں کی تکمیل کے سلسلہ میں چندر شیکھر راؤ سنجیدگی سے اقدامات کر رہے ہیں۔ انہوں نے دیاکر راؤ اور دیگر تلگو دیشم قائدین کو چیالنج کیا کہ وہ اسمبلی کی نشستوں سے مستعفی ہوکر دوبارہ منتخب ہوکر دکھائیں ۔ دھرما ریڈی نے کہا کہ اگر تلگو دیشم قائدین دوبارہ منتخب ہوجائیں تو وہ عملی سیاست سے کنارہ کشی اختیار کرلیں گے۔ ٹی آر ایس قائد رویندر راؤ نے تلگو دیشم قائد ای دیاکر راؤ پر الزام عائد کیا کہ اننہوں نے تلگو دیشم دورہ حکومت میں ورنگل کی ترقی کو فراموش کردیا تھا ۔ انہوں نے سوال کیا کہ تلنگانہ سے تعلق کے باوجود کس طرح تلگو دیشم قائدین آندھرائی پارٹی میں شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT