Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ جہد کاروں کی چھتیس گڑھ میں گرفتاری پر حکومت کی خاموشی افسوسناک

تلنگانہ جہد کاروں کی چھتیس گڑھ میں گرفتاری پر حکومت کی خاموشی افسوسناک

ٹی ڈی ایف کا احتجاجی لائحہ عمل ، ورا ورا ، ویشویشور راؤ ، ہرا گوپال ، چکارامیا کا بیان
حیدرآباد۔18جنوری(سیاست نیوز)انقلابی مصنف ورا ورا رائو نے تلنگانہ جہدکاروں کی چھتیس گڑھ میںغیرقانونی گرفتاری کے خلاف حکومت تلنگانہ کی خاموشی کو افسوسناک قراردیتے ہوئے کہاکہ تلنگانہ ڈیموکرٹیک فورم کے وہ قائدین جنھوں نے علیحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے لئے جان لگادی اور آج پڑوسی ریاست میںان کی گرفتاری پر حکومت تلنگانہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ۔ آج یہاں میڈیاسے بات کرتے ہوئے ورا ورا رائو نے کہاکہ چھتیس گڑھ میں قبائیلیوںپر جاری مظالم سے واقفیت حاصل کرنے کی غر ض سے تشکیل دی گئی ’’ حقائق سے آگاہی کمیٹی‘‘جب چھتیس گڑھ پہنچی توڈسمبر 25کی شب تلنگانہ کے تمام شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والے سات جہدکاروں کو بناء کسی نوٹس کے غیر قانونی طریقے سے گرفتارکرلیاگیا ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت تلنگانہ چھتیس گڑھ میںگرفتار کئے گئے سماجی جہدکاروں‘ وکلاء اور دانشوران کی تمام تفصیلا ت سے واقف ہے مگر اس ضمن میں حکومت نے کوئی کاروائی نہیں کی ہے ۔ اس لیے تلنگانہ حکومت تلنگانہ کی بے حسی اور چھتیس گڑھ میں ٹی ڈی ایف قائدین کی گرفتاری کے خلاف 21جنوری کو اندرا پارک دھرنا چوک پر احتجاجی دھرنا منظم کیاجارہا ہے جس میں جسٹس چندرا کمار‘ پروفیسر کودنڈارام ‘ چکارامیہ ‘ پروفیسر ہرا گوپال کے بشمول 21سے زائد تنظیموں کے ذمہ داران شرکت کریں گے ۔ ورا ورا رائو نے کہاکہ مرکزی اور ریاستی حکومتیںدلت ‘ پسماندہ او رقبائیلی طبقات کے ساتھ مجرمانہ رویہ اختیار کئے ہوئے ہے۔انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت سے امید نہیںہے مگر ریاستی حکومت کو اپنارویہ تبدیل کرتے ہوئے دلت‘ قبائیلی اور اقلیتی طبقات کو ان کے حقوق فراہم کرنے کی حکمت عملی کو اپنانے کی ضرورت ہے۔ انہو ں نے تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد شروتی ودیا ساگر اور آلیر انکاونٹر میں وقار احمد او رساتھیوں کی فرضی انکاونٹر میںہلاکت کابھی اس موقع پر حوالہ دیا۔پروفیسر پی ایل ویشویشوار رائو نے چھتیس گڑھ میںحقائق سے آگاہی ٹیم کی گرفتاری پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ٹی ڈی ایف کے مجوزہ احتجاجی دھرنے میں حکومت کی کوتاہیوں کو منظر عام پر لایاجائے گا۔ پروفیسر جی لکشمن صدر تلنگانہ سیول لبرٹیز نے کہاکہ تین روز قبل احتجاجی دھرنا منعقد کرنے کے لئے ہم نے پولیس میں درخواست دی تھی جس کو اب تک منظور نہیںکیاگیا ۔ انہوں نے کہاکہ احتجاج کے لئے پولیس اجازت نہیںدیتی ہے ، دوسری جانب سے چھتیس گڑھ میںبناء نوٹس کے کمیٹی کے لوگوں کی گرفتاری عمل میںلائی جاتی ہے جبکہ عدالت میں گرفتار شدگان کی ضمانت کے لئے داخل کردہ درخواستوں کو مسلسل مسترد کیاجارہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ ہم انصاف ملنے تک اپنی جدوجہد کو جاری رکھیںگے ۔ دیویندر‘ ویراسم قاسم ‘ این کرشنا ‘ کوٹی اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT