Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ حجاج کرام کے لیے ہوٹلوں میں ناقص انتظامات

تلنگانہ حجاج کرام کے لیے ہوٹلوں میں ناقص انتظامات

مدینہ منورہ پہونچنے والے قافلہ کو بے شمار مسائل کا سامنا ، خادم الحجاج کی اظہار معذوری
حیدرآباد۔15 ستمبر (سیاست نیوز) مدینہ منورہ میں موجود تلنگانہ کے حجاج کرام نے ہوٹلوں میں ناقص انتظامات کی شکایت کی ہے۔ کل رات مکہ مکرمہ سے مدینہ منورہ پہنچنے والے حجاج کرام کے 400 رکنی قافلے کو کئی ایک مسائل کا سامنا ہے۔ ان کے ساتھ موجود خادم الحجاج نے بھی اس سلسلہ میں کسی بھی طرح کے تعاون سے معذوری ظاہر کی اور کہا کہ وہ یہاں کے معاملات میں کوئی اختیار نہیں رکھتے۔ بتایا جاتا ہے کہ حجاج کرام کو مسجد نبویؐ سے ایک کیلومیٹر پر شارع ابی زر پر واقع المرسہ بروز ہوٹل میں جگہ دی گئی جو سہولتوں سے عاری ہے۔ ہوٹل کے ہر روم میں 5 تا 8 افراد کے گروپس کو قیام کے لیے جگہ فراہم کی گئی جبکہ کمرے اس قدر تعداد میں حاجیوں کے قیام کے لیے کافی نہیں ہے۔ قافلے میں موجود حیدرآباد کے حاجی سید یوسف ہاشمی اور خادم الحجاج محمد آصف علی نے فون پر سیاست کو بتایا کہ 10 حاجیوں کے لیے صرف ایک باتھ روم ہے اور دو کمروں کے لیے گزرنے کا صرف ایک ہی راستہ ہے۔ خواتین ان حالات میں پردے کا اہتمام کرنے سے قاصر ہیں اور حوائج ضروریہ کے لیے کافی مشکلات پیش آرہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک کیلومیٹر کے فاصلے پر ہوٹل کے انتظام کے باعث پنج وقتہ نمازوں کے لیے مسجد نبویؐ جانا ضعیف افراد اور خواتین کے لیے ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنٹرل حج کمیٹی نے حجاج کرام کے لیے عمارتوں کے انتخاب میں کوتاہی کی ہے جس کے نتیجہ میں حجاج کو تکالیف کا سامنا ہے۔ عمارتوں کا انتخاب طویل فاصلے پر کیا گیا اور حیدرآباد سے روانگی کے وقت یہ تیقن دیا گیا کہ عمارتیں قریب میں ہیں۔ حجاج کرام نے اپنی دشواریوں اور مشکلات سے حج مشن کے ذمہ داروں کو واقف کرایا لیکن مقامی طور پر کوئی بھی مسئلہ کی یکسوئی کے موقف میں دکھائی نہیں دے رہا ہے۔ انہوں نے اسپیشل آفیسر تلنگانہ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کو صورتحال سے واقف کرایا۔ اسی دوران لنگر حوض سے تعلق رکھنے والے حاجی جناب یوسف علی کا ہینڈ بیاگ حیدرآباد سے جدہ پہنچنے کے بعد سے آج تک نہیں ملا ہے۔ جدہ ایرپورٹ پر عہدیداروں نے بس میں ہینڈ بیاگ ساتھ رکھنے سے منع کردیا اور اسے لگیج میں شامل کرنے کا مشورہ دیا۔ اس ہینڈ بیاگ میں حاجی صاحب کی ضروری ادویات اور کپڑے شامل تھے جو آج تک انہیں نہیں ملے۔ ہینڈ بیاگ کے سلسلہ میں حکام سے کلیم کرنے پر انہیں 100 روپئے کا پیشکش کیا گیا۔ خادم الحجاج انتظامی خامیوں کے سلسلہ میں بے بس دکھائی دے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT