Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ حج کوٹہ میں اضافہ کی مساعی، محمد محمود علی کی دہلی روانگی کی تجویز

تلنگانہ حج کوٹہ میں اضافہ کی مساعی، محمد محمود علی کی دہلی روانگی کی تجویز

نجمہ ہپت اللہ اور متعلقہ عہدیداروں سے ملاقات کا پروگرام، کے سی آر کا مکتوب پیش کیا جائے گا
حیدرآباد۔/2اپریل، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی تلنگانہ کیلئے حج کوٹہ میں اضافہ کے سلسلہ میں مرکز سے نمائندگی کریں گے۔ وہ 5 اپریل کو نئی دہلی روانہ ہورہے ہیں جہاں مرکزی وزیر اقلیتی اُمور نجمہ ہپت اللہ اور دیگر متعلقہ اعلیٰ عہدیداروں سے نمائندگی کریں گے۔ ڈپٹی چیف منسٹر حج کوٹہ میں اضافہ کیلئے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے مکتوب کے ساتھ نئی دہلی روانہ ہوں گے اور یہ مکتوب وزیر اقلیتی اُمور کے حوالے کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حج 2015کے مقابلہ جاریہ سال تلنگانہ کے حج کوٹہ میں اضافہ کے بجائے مزید کمی کی گئی ہے جس سے ہزاروں درخواست گذاروں کو مایوسی ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں مسلم اقلیت کی آبادی کے اعتبار سے حج کوٹہ 4000تا ساڑھے چار ہزار ہونا چاہیئے لیکن مرکزی حکومت 3000 سے کم کوٹہ الاٹ کررہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مرکز سے نمائندگی کیلئے مرکزی وزیر بنڈارودتاتریہ نے بھی تیقن دیا ہے۔ اس کے علاوہ ریاست کے تمام اپوزیشن جماعتوں نے بھی اضافہ کوٹہ کیلئے تعاون کا یقین دلایا ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کو یقین ہے کہ مرکزی حکومت تلنگانہ کیلئے جاریہ سال زائد حج کوٹہ الاٹ کرے گی۔ انہوں نے بتایا کہ نئی دہلی میں اقلیتوں سے متعلق دیگر اسکیمات کیلئے مرکزی فنڈز حاصل کرنے نمائندگی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ محمود علی نے محکمہ اقلیتی بہبود سے مرکزی اسکیمات اور ان سے حاصل ہونے والے فنڈز کی تفصیلات طلب کی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مرکزی حکومت اقلیتی بہبود کی اسکیمات کیلئے زائد فنڈز الاٹ کرنے تیار ہے لیکن عہدیدار اس جانب توجہ نہیں دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکز سے زائد فنڈز حاصل کرتے ہوئے تلنگانہ میں اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر موثر انداز میں عمل کیا جاسکتا ہے۔ مرکزی اسکیمات کے علاوہ زائد اضافی فنڈز کیلئے مرکزی وزیر اقلیتی اُمور سے نمائندگی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام کے سلسلہ میں سنجیدہ ہے تاکہ عمرہ اور دیگر خدمات کے سلسلہ میں عوام کو دہلی یا ممبئی جانے کی زحمت سے بچایا جاسکے۔ حکومت سعودی عرب نے حیدرآباد میں کونسلیٹ کے قیام سے اتفاق کیا ہے تاہم اس سلسلہ میں وزارت خارجہ کی منظوری کا انتظار ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نئی دہلی میں سعودی عرب کے سفیر سے ملاقات کرسکتے ہیں تاکہ حیدرآباد میں کونسلیٹ کے قیام کی کارروائی میں سرعت پیدا کی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ جاریہ سال مکہ مکرمہ میں واقع حیدرآبادی رباط میں ایک ہزار عازمین کیلئے طعام و قیام کے انتظامات کی کوشش کی جارہی ہے۔ گزشتہ سال 600 حجاج کرام کیلئے مفت قیام و طعام کا انتظام کیا گیا تھا۔ ناظر رباط حسین محمد الشریف نے 1000 عازمین کیلئے انتظامات سے اتفاق کیا ہے۔ محمد محمود علی نے بتایا کہ حکومت اس بات کی کوشش کررہی ہے کہ مکہ مکرمہ میں منہدم کی گئی حیدرآبادی رباطوں کے معاوضہ کے طور پر رقم کے بجائے اراضی یا عمارتیں الاٹ کردی جائیں تاکہ تلنگانہ کے تمام عازمین کو رباط کی سہولت فراہم کی جاسکے اس سے بھاری رقم کی بچت ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ حج 2016کیلئے تلنگانہ حکومت نے گزشتہ سال سے بہتر انتظامات کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ مکہ مکرمہ میں حیدرآبادی رباط کے سلسلہ میں بات چیت کیلئے مئی میں سعودی عرب کا دورہ کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT