Wednesday , January 17 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ حکومت برقی کے حصول میں ناکام،ترقی و بہبود کے دعوے کھوکھلے ثابت: جیون ریڈی

تلنگانہ حکومت برقی کے حصول میں ناکام،ترقی و بہبود کے دعوے کھوکھلے ثابت: جیون ریڈی

حیدرآباد /13 جنوری (سیاست نیوز) کانگریس رکن اسمبلی ٹی جیون ریڈی نے کرشنا پٹنم سے تلنگانہ کے لئے مختص برقی کے حصول میں ناکامی کا ٹی آر ایس حکومت پر الزام عائد کیا۔ آج میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ تقسیم ریاست کے بل میں تلنگانہ کے لئے آندھرا کے کرشنا پٹنم سے برقی مختص کی گئی تھی، تاہم چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ، چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو سے مشاورت اور برقی کے حصول میں پوری طرح ناکام ہو گئے۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت ترقی و بہبود کے بلند بانگ دعوے کر رہی ہے، مگر کار کردگی صفر ہے۔ حکومت نے کابینہ میں فیصلے اور اسمبلی میں قرارداد منظور کرنے کے سوا کچھ نہیں کیا، جس کی وجہ سے تلنگانہ کے عوام اور کسان دونوں بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ زرعی شعبہ اور صنعتی سرگرمیاں ٹھپ ہوگئی ہیں، کئی سرمایہ دار تلنگانہ میں سرمایہ کاری کرنا چاہتے تھے، تاہم برقی بحران کی وجہ سے اپنا ارادہ تبدیل کرکے ملک کی دیگر ریاستوں کا رخ کر رہے ہیں، اس طرح تلنگانہ حکومت سرمایہ داروں کا اعتماد حاصل کرنے میں ناکام ہو گئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ آندھرا پردیش برقی سربراہی کے معاملے میں تلنگانہ کے ساتھ حق تلفی کر رہا ہے اور چیف منسٹر خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔ انھوں نے اپنا حصہ حاصل کرنے کے لئے مرکز پر دباؤ ڈالنے کی کوشش نہیں کی، یہاں تک کہ وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کے لئے وقت بھی نہیں حاصل کرسکے۔

TOPPOPULARRECENT