Thursday , September 20 2018
Home / اضلاع کی خبریں / تلنگانہ حکومت ریاست کے تمام طبقات کو ہرشعبہ میں ترقی دینے کوشاں

تلنگانہ حکومت ریاست کے تمام طبقات کو ہرشعبہ میں ترقی دینے کوشاں

عادل آباد میں حج ہاوز کی عمارت کے سنگ تقریب سے نائب وزیر اعلیٰ محمد محمود علی و دیگر کا خطاب

عادل آباد ۔ 10؍ ڈسمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) عادل آباد کے عوام کی دیرینہ خواہش کو پورا کرنے کی غرض سے مستقر عادل آباد میں دو ایکر اراضی پر حج ہاوز عمارت کی تعمیر کا سنگ بنیاد اور مقامی جمعیۃ العلماء کے دفتر کا 20 لاکھ روپیوں کے صرفہ سے تعمیری کا م کا آغاز کیا ۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے جہاں ایک طرفہ کیا وہیں دوسری طرف مستقر عادل آباد کے عبداللہ چوک پر ایک عظیم جلسہ سے مخاطب ہو کر ریاستی وزیر مسٹر جوگو رامنا کے مطالبہ کی یکسوئی کرنے کا تیقن دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہاکہ وہ چیف منسٹر سے نمائندگی کرتے ہوئے حلقہ اسمبلی عادل آباد کے مسلم افراد خاندانوں کو ڈبل بیڈ روم 500 مکانات کی منظوری اور معاشی اعتبار سے کمزور نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کا 500 نوجوانوں و سبسیڈی رقم کے تحت قرضہ جات فراہم کرنے ‘ مساجد کی جزوی تعمیر اور دیگر ضروریات کی تکمیل کے لئے 4 کروڑ 60 لاکھ روپئے منظور کرانے سے اتفاق کیا ۔ مسٹر محمد محمو د علی نے اپنے خطاب میں ریاستی حکومت اور چیف منسٹر کے چند شیکھرراؤ کی بھرپور ستائش کرتے ہوئے کہا کہ 400 سالہ آصف جاہی حکومت کے بعد تلنگانہ حکومت ریاست کے تمام طبقات کے ساتھ ہمدردانہ رویہ رکھتے ہوئے زندگی کے ہر شعبہ میں انہیں ترقی دلانے کے لئے کوشاں ہے جس کے پیش نظرایس سی ‘ ایس ٹی ‘ اور مسلم 100 لڑکے اور لڑکیوں کو ہر سال ریاستی حکومت کی جانب سے IAS کا امتحان دلانے کا منصوبہ بنایاگیا ہے علاوہ ازیں امریکہ ‘ لندن ‘ کینڈا جیسے ممالک میں اعلیٰ تعلیم روانگی کے لئے 20 لاکھ روپئے ایک طرفہ ایئر ٹکٹ مفت فراہم کیا جا رہا ہے ۔ اس موقعہ پر ڈپٹی چیف منسٹر نے ریاستی حکومت سے تیقن دیا کہ وہ مسلم افراد کے لئے 12% تحفظات کو یقینی بنانے سپریم کورٹ سے رجوع ہوگی جبکہ ریاستی قانون ساز کونسل میں اس کی منظوری حاصل ہوچکی ہے ۔ کانگریس پارٹی پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہاکہ کانگریس کے 40 سال اور تلگودیشم کے 17 سال دور میں مسلمانوں کے ساتھ مسلسل ناانصافی کی گئی جس کے بناء پر مسلمان پسماندگی کا شکار ہوگئے ۔ چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے اردو کو سرکاری زبان کا درجہ دینے کے علاوہ اس پر عمل آوری کی غرض 66 ترجمہ نگار کا تقرر ریاستی اور ضلع کے ہر اعلیٰ عہدیدار کے دفتر میں کرنے سے اتفاق کیا ۔ مسٹر کے چندرشیکھرراؤ کو ملک میں اول درجہ کا چیف منسٹر قرار دیتے ہوئے مسلمانوں کا ہمدرد ظاہر کیا ۔ گورنمنٹ ریسیڈنشیل اسکولس میناریٹی کے قیام کو تاریخ ساز کارنامہ بتاتے ہوئے کہاکہ ریاست میں 204 انگلش میڈیم مدارس میں 48 ہزار طلبا اور طالبات استفادہ کر رہے ہیں۔ عادل آباد کے عوام کو عدل و انصاف کا ترازو قرار دیتے ہوئے عادل آباد کی ترقی کے لئے ریاستی وزیر مسٹر جوگو رامنا کو ہر وقت مصروف رہنے پر ان کی بھرپور ستائش کی ۔ قبل ازیں گریٹر حیدرآباد میونسپل ڈپٹی میئر بابا فصیح الدین ‘ بوتھ رکن اسمبلی راٹھوربابوراؤ ‘ بھوماریڈی‘ مولانا بشیر احمد قاسمی ‘ سید ساجد الدین ‘ سراج قادری ‘ آر منشاء ‘ مسٹر یونس اکبانی ‘ مالیتی کارپوریشن مسٹر سید اکبر حسین ‘ محمد ظہورالدین و دیگر نے بھی مخاطب ہو کر ریاستی حکومت کارکردگی کی بھرپور ستائش کی ۔ قبل ازیں موٹر سیکل ریالی کے ذریعہ ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر محمد محمو د علی کو جلسہ گاہ لایا گیا جہاں پر سینکڑوں مرد خواتین نے ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت اختیار کی ۔

TOPPOPULARRECENT