Wednesday , February 21 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ حکومت کی ڈبل بیڈ روم مکانات اسکیم ناکام

تلنگانہ حکومت کی ڈبل بیڈ روم مکانات اسکیم ناکام

وائیٹ پیپر جاری کرنے بی جے پی لیڈر دتاتریہ کا مطالبہ
حیدرآباد 4 فبروری (پی ٹی آئی ) سابق مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ نے آج حکومت تلنگانہ سے کہا کہ وہ ناکام ڈبل بیڈروم ہاوزنگ اسکیم پر وائیٹ پیپر جاری کرے ۔ سینئر بی جے پی لیڈر نے چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو اور چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ سے اپیل کی کہ وہ وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کریں کیونکہ دونوں ہی پارٹیوں کے کچھ قائدین نے مرکزی بجٹ پر ناراضگی کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ حکومت کی ڈبل بیڈروم اسکیم ناکام ہوگئی ہے ۔ مرکزی حکومت کی جانب سے اپنے حصے کے طور پر اس اسکیم کیلئے فنڈز فراہم کئے جا رہے ہیں۔ اس کے باوجود ٹی آر ایس حکومت کا وعدہ ابھی تک پورا نہیں ہوا ہے ۔ وہ مطالبہ کرتے ہیں کہ اس اسکیم پر وائیٹ پیپر جاری کیا جائے تاکہ عوام کو بھی حقائق معلوم ہوسکیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ یہ بھی جانتے ہیں کہ ڈبل بیڈ روم ہاوزنگ اسکیم کیلئے اراضیات کے حصول میں کچھ مشکلات پیش آ رہی ہیں۔ دتاتریہ نے مزید کہا کہ ریاستی حکومت کسانوں کے بیشتر مسائل پر مرکز کو ذمہ دار قرار نہیں دے سکتی کیونکہ زراعت ریاستی مسئلہ ہے ۔ انہوں نے تلنگانہ حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ کسانوں کی پردھان منتری فصل بیما یوجنا حاصل کرنے کیلئے حوصلہ افزائی نہیں کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں کسانوں کی خود کشی کے واقعات تشویشناک حد تک بڑھ گئے ہیں۔ انہوں نے مرکزی بجٹ کو انقلابی ‘ ترقی پسند اور موافق غریب قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ میں کسانوں کو زیادہ ترجیح دی گئی ہے ۔ بجٹ سے زرعی شعبہ کے مسائل کو حل کرنے میں بڑی حد تک مدد مل سکتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT