Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ ریاست کی نئی سکریٹریٹ کی ضرورت نہیں

تلنگانہ ریاست کی نئی سکریٹریٹ کی ضرورت نہیں

حکومت کا فیصلہ رقم برباد کرنے کے مترادف ، وی ہنمنت راؤ کا بیان
حیدرآباد ۔ /25 ستمبر (سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے تلنگانہ سکریٹریٹ دفاتر کیلئے سکندرآباد علاقہ میں نئی عمارتیں تعمیر کرنے کی تجویز پر سینئر کانگریس قائد و سابق رکن پارلیمان مسٹر وی ہنمنت راؤ نے نہ صرف سخت اعتراض کیا بلکہ چندرا شیکھر راؤ کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ چیف منسٹر کے اس اقدام سے عوامی رقومات ضائع ہوں گی اور رقومات برباد ہوں گی ۔ کیونکہ تلنگانہ میں سکریٹریٹ کیلئے عمارتیں موجود ہیں اور کوئی نئی عمارتوں کی تعمیر عمل میں لانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ آج اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ہنمنت راؤنے مذکورہ اظہار خیال کرتے ہوئے کے چندر شیکھر راؤ پر نئی سکریٹریٹ عمارت کی تعمیر کے نام پر عوامی رقومات کا بیجا استعمال کرنے کی کوشش کرنے کا الزام عائد کیا اور ’’واستو‘‘ کے نام پر سینکڑوں کروڑ روپئے بیجا طور پر خرچ نہ کرنے کی چیف منسٹر سے پرزور خواہش کی ۔ ہنمنت راؤ نے تلنگانہ میں سکریٹریٹ کیلئے آیا نئی عمارت کی تعمیر ضروری ہے ؟ اس موضوع کو لیکر انہوں نے عوامی رائے عامہ حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اپنے اس فیصلہ کی روشنی میں وہ باقاعدہ طور پر رائے دہی منعقد کریں گے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں (20) اہم مقامات پر /26 ستمبر کو مراکز رائے دہی قائم کرکے رائے دہی کروائیں گے اور /27 ستمبر کو رائے دہی کے ذریعہ ڈالے گئے ووٹوں کی گنتی کروائی جائے گی ۔ مسٹر ہنمنت راؤ نے چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے اپنی سوچ کو تبدیل کرلینے کی پرزور خواہش کی ۔

TOPPOPULARRECENT