Wednesday , September 19 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں آئندہ انتخابات میں کانگریس کے دعوے مضحکہ خیز

تلنگانہ میں آئندہ انتخابات میں کانگریس کے دعوے مضحکہ خیز

ٹی آر ایس ایم ایل سی بی راملو نائیک کا میڈیا سے خطاب
حیدرآباد۔ 15 ڈسمبر (سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل بی راملو نائک نے آئندہ انتخابات میں تلنگانہ میں کانگریس کی کامیابی سے متعلق کانگریس قائدین کے دعوئوں کو مضحکہ خیز قرار دیا۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے راملو نائک نے کہا کہ پنجاب کی طرح تلنگانہ میں کامیابی کا دعوی کانگریس کے لیے کسی خواب سے کم نہیں ہے۔ 2019ء تو کیا 2024ء میں بھی کانگریس تلنگانہ میں کامیابی حاصل نہیں کرسکتی۔ انہوں نے کہا کہ صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی اور صدر اے آئی سی سی راہول گاندھی آئیرن لِگ ہیں جن کے ذریعہ کانگریس پارٹی کبھی ترقی نہیں کرسکتی۔ راہول گاندھی نے جہاں بھی قدم رکھا کانگریس پارٹی کو شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ اسی طرح اتم کمار ریڈی بھی تلنگانہ میں کانگریس کی شکست کی علامت بن چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اتم کمار ریڈی ریاست کی 31 ایس سی، ایس ٹی محفوظ نشستوں پر کامیابی کا دعوی کررہے ہیں۔ حالانکہ ان حلقوں سے کانگریس پارٹی کی ضمانت بھی نہیں بچے گی۔ راملو نائک نے کہا کہ جس طرح پنجاب میں شراب اور دولت کے ذریعہ کانگریس نے کامیابی حاصل کی وہ طریقہ کار تلنگانہ میں نہیں چلے گا۔ تلنگانہ کے عوام چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو کے ساتھ ہیں اور کسی اور پارٹی کے لیے تلنگانہ میں کوئی مقام نہیں ہے۔ کے سی آر نے 14 برس کی طویل جدوجہد کے بعد تلنگانہ ریاست حاصل کی اور اس جدوجہد کے دوران کئی قربانیاں دی گئیں۔ کانگریس اور تلگودیشم قائدین نے تلنگانہ تحریک میں کوئی رول ادا نہیں کیا بلکہ وہ اپنے عہدے بچانے کے لیے آندھرائی قائدین کا ساتھ دے رہے تھے۔ راملو نائک نے کہا کہ چیف منسٹر نے تمام طبقات کی ترقی پر توجہ مرکوز کی ہے اور ہر طبقہ حکومت کے اقدامات سے خوش ہے۔ بنجارہ طبقہ کے لیے بنجارہ ہلز میں بھون تعمیر کا آغاز کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی ایس ٹی اور اقلیتی طبقات ٹی آر ایس کے ساتھ ہیں کیوں کہ چیف منسٹر نے منفرد اسکیمات کے ذریعہ ان طبقات کی تعلیمی اور معاشی ترقی کا بیڑہ اٹھایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتم کمار ریڈی کی قیادت میں کانگریس پارٹی نے ایک وارڈ میں بھی کامیابی حاصل نہیں کی۔ ان کی قیادت میں کس طرح اسمبلی میں اکثریت حاصل ہوگی۔ گجرات اور ہماچل پردیش کے ایگزٹ پول نتائج کانگریس قائدین کی آنکھیں کھولنے کے لیے کافی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی ایس ٹی طبقات سے جھوٹی ہمدردی کے ذریعہ سیاسی فائدہ حاصل کرنے کی کوششیں کبھی کامیاب نہیں ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور تلگودیشم ان طبقات میں پھوٹ پیدا کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ کے سی آر کی قیادت میں 2019ء میں ٹی آر ایس کو شاندار کامیابی حاصل ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT