Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کے قیام کی مساعی

تلنگانہ میں آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کے قیام کی مساعی

حیدرآباد ۔ 10 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت تلنگانہ ریاست میں آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کے قیام کے سلسلہ میں 200 ایکڑ اراضی کی تخصیص کا جائزہ لے رہی ہے ۔ ریاست تلنگانہ میں قومی تعلیمی اداروں کی موجودگی کے سبب تلنگانہ کو فوری طور پر کسی قومی ادارے کی ضرورت نہیں ہے لیکن حکومت کی جانب سے تلنگانہ میں انڈین اسکول آف مینجمنٹ ( آئی آ

حیدرآباد ۔ 10 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت تلنگانہ ریاست میں آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کے قیام کے سلسلہ میں 200 ایکڑ اراضی کی تخصیص کا جائزہ لے رہی ہے ۔ ریاست تلنگانہ میں قومی تعلیمی اداروں کی موجودگی کے سبب تلنگانہ کو فوری طور پر کسی قومی ادارے کی ضرورت نہیں ہے لیکن حکومت کی جانب سے تلنگانہ میں انڈین اسکول آف مینجمنٹ ( آئی آئی ایم ) کے قیام کے لیے مرکز سے متعدد نمائندگیاں جاری ہیں ۔ چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ریاست تلنگانہ میں آئی آئی ایم کے قیام کے لیے تجویز اپنے دورہ دہلی کے دوران مرکزی وزیر برائے فروغ انسانی وسائل مسز سمرتی ایرانی کے حوالے کی جب کہ ان کی دختر مسز کے کویتا رکن پارلیمنٹ نظام آباد نے بھی مسز ایرانی سے ملاقات کرتے ہوئے تلنگانہ میں آئی آئی ایم کے قیام کی خواہش کی تھی ۔ مرکزی حکومت نے جولائی میں مذکورہ تجویز پر غور کرنے کا تیقن دیا تھا لیکن تاحال حیدرآباد یا تلنگانہ میں قیام آئی آئی ایم کی کوئی پیشرفت ممکن نہیں ہوپائی ہے ۔

حکومت تلنگانہ ریاست میں شعبہ صحت کی بہتری کے لیے ایمس کے عاجلانہ قیام کو یقینی بنانے کی کوشش میں چونکہ ریاست کی ترجیح راست طور پر عوام سے رابطہ میں رہنا ہے ۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے بموجب آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کے قیام کے لیے حکومت تلنگانہ حیدرآباد کے نواحی علاقوں کو ترجیح دے رہی ہے ۔ 840 کروڑ کے صرفہ سے قائم کئے جانے والے اس انتہائی عصری و قابل ماہرین کی نگرانی میں تعمیر کیے جانے والے ہاسپٹل سے شہر کے علاوہ اضلاع کے عوام کو بھی فائدہ پہنچے گا ۔ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ اس دواخانہ کے ساتھ کم از کم 100 نشستوں پر مشتمل میڈیکل کالج کے حصول کے لیے بھی کوشاں ہیں اور حکومت کو یقین ہے کہ وہ 960 بستروں پر مشتمل اس ایمس کو میڈیکل کالج کا حصول دشوار کن نہیں ہوگا ۔ اس پراجکٹ کی تکمیل کی حکومت کی جانب سے کوششیں جاری ہیں لیکن اراضی کی نشاندہی کے فوری بعد ہی تعمیری سرگرمیاں ممکن ہے ۔ ذرائع کے بموجب مرکزی حکومت نے آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کے لیے عام بجٹ میں رقم بھی مختص کردی ہے اور اگر جلد از جلد اراضی کی نشاندہی و حوالگی کے بعد ہی تعمیری سرگرمیاں شروع ہوسکتی ہیں اور ریاست میں ایمس کے قیام سے حالات میں زبردست تبدیلی کی توقع کی جاسکتی ہے چونکہ اس سے شعبہ صحت میں مثبت تبدیلی پیدا ہوگی ۔۔

TOPPOPULARRECENT