Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں اردو کے فروغ کیلئے چیف منسٹر کی کوشش ناگزیر

تلنگانہ میں اردو کے فروغ کیلئے چیف منسٹر کی کوشش ناگزیر

اقلیت دوست کا عملی ثبوت دینے 10 اضلاع میں اردو کو عام کرنے کی ضرورت

اقلیت دوست کا عملی ثبوت دینے 10 اضلاع میں اردو کو عام کرنے کی ضرورت
حیدرآباد ۔ 10 ۔ مارچ : ( عبدالرشید سلفی): طویل جدوجہد کے بعد حاصل ہونے والی نو تشکیل شدہ علحدہ ریاست تلنگانہ میں اردو زبان کو دوسری سرکاری زبان کا موقف دئیے جانے سے متعلق جدید ریاست تلنگانہ حکومت کی جانب سے تازہ ترین احکامات کی اجرائی تو عمل میں نہیں لائے گئے البتہ جدید ریاست تلنگانہ کے پہلے چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے تحریک تلنگانہ کے دوران علاقہ تلنگانہ کے مسلمانوں کی جانب سے تحریک میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ہوئے دی گئی قربانیوں کے علاوہ ریاست تلنگانہ پر نظام دور حکومت کے احسانات کو مد نظر رکھتے ہوئے جدید ریاست تلنگانہ کے تیار کئے گئے سرکاری لوگو میں اردو زبان میں ’ تلنگانہ سرکار ‘ درج کروایا ہے جو ایک انتہائی مستحسن اقدام ہے اور ریاست تلنگانہ کے مسلم اقلیتوں اور اردو داں طبقہ کے لیے باعث فخر بھی ثابت ہوا ۔ لیکن سوال اسبات کا ہے کہ کیا حکومت کی جانب سے صرف سرکاری لوگو میں اردو زبان کے استعمال سے اردو زبان کی ترقی ممکن ہے ؟ اردو زبان کی ترقی تو اس وقت ہی ممکن ہوگی جس طرح سے چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ریاست تلنگانہ کے زائد از ایک کروڑ سرکاری لوگو میں اردو زبان کا استعمال کرتے ہوئے مسلم اقلیت نوازی کا ثبوت دیا ہے اسی طرح سے انہیں چاہئے کہ وہ ریاست تلنگانہ میں اردو زبان کو دوسری سرکاری زبان کا موقف دئیے جانے سے متعلق سرکاری احکامات جاری کرتے ہوئے ریاست تلنگانہ کے 10 اضلاع میں واقع تمام محکمہ جات بشمول ضلع کلکٹرس اور محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ کے دفاتر کو اردو زبان کو دوسری سرکاری زبان کے طور پر استعمال کرنے اور اس پر سختی سے عمل آوری کی ہدایات جاری کریں ۔ علاوہ ازیں اردو زبان کی ترقی اس وقت ہی ممکن ہوگی تاوقتیکہ ریاست تلنگانہ میں واقع اردو میڈیم مدارس کا از سر نو جائزہ لیتے ہوئے اردو میڈیم مدارس میں مخلوعہ اور تقرر طلب اردو اساتذہ کے تقررات عمل میں لائے جائیں ۔ بالخصوص حکومت کو چاہئے کہ وہ ریاست تلنگانہ میں واقع تمام محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ کے دفاتر میں اردو ٹرانسلیٹرس کے تقررات عمل میں لایا جائے تاکہ اردو اخبارات میں مسلم اقلیتوں کو درپیش مسائل سے متعلق شائع ہونے والے خبروں کے تراشوں کا تلگو زبان یا انگریزی زبان میں ترجمہ کر کے متعلقہ محکمہ جات تک مسائل کی رسائی کی جاسکے اور اس طرح سے حکومت تلنگانہ کی جانب سے تمام محکمہ جات کو یہ بھی ہدایات جاری کئے جائیں کہ عوام کی جانب سے اردو زبان میں دی جانے والی شکایات اور درخواستوں کو قبول کئے جائیں تاکہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے ریاست تلنگانہ کو ’’ سنہرے تلنگانہ ‘‘ میں تبدیل کرنے کا خواب شرمندہ تعبیر ہوسکے ۔۔

TOPPOPULARRECENT