Saturday , December 15 2018

تلنگانہ میں اقتدار اتم کمار ریڈی کا دن میں خواب

ٹی آر ایس ایم ایل سی راملو نائک کا ریمارک، پنچایت چناؤ میں کامیابی کا چیلنج
حیدرآباد ۔ 5 ۔اپریل (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے کہا کہ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی دن میں خواب دیکھ رہے ہیں۔ ریاست میں برسر اقتدار آنے سے متعلق کانگریس کے دعوے مضحکہ خیز ہیں اور آئندہ 20 برسوں تک ٹی آر ایس تلنگانہ میں برسر اقتدار رہے گی۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے رکن قانون ساز کونسل بی راملو نائک نے کہا کہ اتم کمار ریڈی 2019 ء کے انتخابات میں 86 اسمبلی حلقوں پر کامیابی کا دعویٰ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 86 اسمبلی حلقے تو کجا آئندہ پنچایت انتخابات میں کانگریس 80 پنچایتوں پر کامیابی حاصل کر کے دکھائے۔ انہوں نے کہا کہ اتم کمار ریڈی کو چیلنج کے طور پر اسے قبول کرنا چاہئے ۔ پنچایت انتخابات میں عوام کی پسند کا فیصلہ ہوجائے گا اور کانگریس کو سخت ہزیمت اٹھانی پڑے گی ۔ راملو نائک نے کہا کہ کانگریس قائدین خواب دیکھتے رہیں گے لیکن آئندہ 20 برسوں تک ٹی آر ایس کا اقتدار قائم رہے گا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ کانگریس نے اپنے دور اقتدار میں پسماندہ طبقات اور ڈیویژنوں کے ساتھ سخت ناانصافی کی ہے۔ ٹی آر ایس میں خاندانی حکمرانی سے متعلق اتم کمار ریڈی کے الزامات پر تبصرہ کرتے ہوئے راملو نائک نے کہا کہ پی سی سی صدر کو خاندانی حکمرانی کے بارے میں کہنے کا کوئی اخلاقی حق نہیں ہے۔ اتم کمار ریڈی اور ان کی اہلیہ دونوں اسمبلی کے رکن ہیں، کیا یہ خاندانی حکمرانی نہیں ؟ کانگریس میں کومٹی ریڈی برادرس ، ملو روی ، بھٹی وکرمارکا برادرس ، سبیتا اندرا ریڈی اور ان کے فرزند کارتک ریڈی یہ تمام خاندانی حکمرانی کی زندہ مثال ہے۔ نائک نے کہا کہ ہریش راؤ ، کے ٹی آر اور کویتا نے 14 برسوں تک تلنگانہ جدوجہد میں حصہ لیا اور جیل بھی گئے ۔ انہیں عوام نے منتخب کیا ہے ، لہذا ٹی آر ایس میں خاندانی حکمرانی کا الزام بے بنیاد ہے۔ انہوں نے کہا کہ جے اے سی کے صدرنشین کودنڈا رام کس کے اشارہ پر کام کر رہے ہیں ، عوام اچھی طرح جانتے ہیں۔ نئی پارٹی کے قیام کے ذریعہ وہ ٹی آر ایس کو کمزور کرنا چاہتے ہیں۔ کودنڈا رام دراصل اپوزیشن کے ایجنٹ کی طرح کام کر رہے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT