Sunday , October 21 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں اقتدار کا دعویٰ کانگریس کا خواب

تلنگانہ میں اقتدار کا دعویٰ کانگریس کا خواب

ترقیاتی اور فلاحی اسکیمات سے عوام مطمئن،وزیر پنچایت راج جوپلی کرشنا راؤ کی پریس کانفرس
حیدرآباد۔15۔ فروری (سیاست نیوز) وزیر پنچایت راج جوپلی کرشنا راؤ نے کہا کہ کانگریس قائدین تلنگانہ میں اقتدار کا خواب دیکھ رہے ہیں، حالانکہ عوام نے کانگریس پارٹی کو مسترد کردیا ہے۔ تلنگانہ عوام کی جانب سے کانگریس پارٹی اور اس کے قائدین پر اعتماد کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کرشنا راؤ نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں ٹی آر ایس کی کامیابی یقینی ہے اور عوام نے حکومت کی ترقیاتی اور فلاحی اسکیمات کے بدلہ دوبارہ اقتدار میں لانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات کے سلسلہ میں اپوزیشن جماعتیں بعض بوگس سروے کی بنیاد پر کامیابی کا دعویٰ کر رہی ہیں جبکہ حقیقت میں ٹی آر ایس کو دو تہائی اکثریت حاصل ہوگی۔ وزیر پنچایت راج نے کہا کہ پنشن، بینکوں سے قرض اور دیگر اسکیمات سے دیہی علاقوں میں لاکھوں خاندانوں کو فائدہ پہنچا ہے ۔ انہوں نے صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی پر سخت تنقید کی اور کہا کہ حکومت کے خلاف بے بنیاد الزامات عائد کرتے ہوئے عوامی تائید حاصل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہوں نے کانگریس کے ان وعدوں کو مضحکہ خیز قرار دیا کہ برسر اقتدار آنے پر خواتین کو قرض اور سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے گا۔ عوام حقائق اچھی طرح جانتے ہیں کہ اور متحدہ آندھراپردیش میں کانگریس پارٹی نے جس طرح تلنگانہ کی ترقی کو نظر انداز کیا تھا ، لہذا اب اس پر دوبارہ بھروسہ نہیں کیا جاسکتا ۔ کرشنا راؤ نے کہا کہ کانگریس دور حکومت میں 29 لاکھ 21 ہزار 828 افراد کو ماہانہ 200 روپئے کے حساب سے 835 کروڑ 64 لاکھ روپئے بطور پنشن جاری کئے گئے جبکہ ٹی آر ایس حکومت نے وظیفہ کی رقم کو 200 سے بڑھاکر ایک ہزار اور 500 روپئے وظیفہ کو بڑھاکر 1500 روپئے کردیا ہے۔ 39 لاکھ 77 ہزار 693 افراد کو وظائف تقسیم کئے جارہے ہیں۔ حکومت وظائف کی تقسیم پر سالانہ 5301 کروڑ 83 لاکھ روپئے خرچ کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ زرعی شعبہ کے لئے ٹی آر ایس حکومت نے جن رعایتوں کا اعلان کیا ہے ، ملک کی کسی اور ریاست میں اس طرح کی رعایتیں نہیں دی گئیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس میں 2009 ء میں عوام سے جو وعدے کئے تھے ، ان کی تکمیل میں ناکام ہوگئی جس کے باعث عوام نے کانگریس کو مسترد کردیا ۔ وزیر پنچایت راج نے کہا کہ کسانوں کو 24 گھنٹے بلا وقفہ برقی سربراہی کے سی آر حکومت کا کارنامہ ہے۔ آبپاشی پراجکٹس کی تکمیل کیلئے مشن کاکتیہ اور ہر گھر کو صاف پینے کے پانی کی سربراہی کیلئے مشن بھگیرتا پر تیزی سے عمل آوری جاری ہے۔ انہوں نے کانگریس قائدین کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت کے خلاف بے بنیاد الزام تراشی سے گریز کریں۔

TOPPOPULARRECENT