Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں اقلیتی اسکیمات کو مرکز کی ممکنہ مدد

تلنگانہ میں اقلیتی اسکیمات کو مرکز کی ممکنہ مدد

حیدرآباد 10 فروری (پریس نوٹ) مرکزی وزیر اقلیتی اُمور محترمہ نجمہ ہپت اللہ نے اقلیتی فرقوں کی فلاح و بہبود کے لئے حکومت تلنگانہ کی وضع کردہ اسکیمات پر عمل آوری کے لئے مکمل تعاون کا تیقن دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی کی زیرقیادت حکومت تلنگانہ کے وفد نے آج مرکزی وزیر سے ملاقات کی۔ اِس موقع پر نجمہ ہپت اللہ نے کہاکہ زائد فنڈ

حیدرآباد 10 فروری (پریس نوٹ) مرکزی وزیر اقلیتی اُمور محترمہ نجمہ ہپت اللہ نے اقلیتی فرقوں کی فلاح و بہبود کے لئے حکومت تلنگانہ کی وضع کردہ اسکیمات پر عمل آوری کے لئے مکمل تعاون کا تیقن دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی کی زیرقیادت حکومت تلنگانہ کے وفد نے آج مرکزی وزیر سے ملاقات کی۔ اِس موقع پر نجمہ ہپت اللہ نے کہاکہ زائد فنڈس کی اجرائی کو یقینی بنایا جائے گا اور تلنگانہ ریاست میں زیادہ سے زیادہ اسکیمات پر عمل آوری کی جائے گی۔ یہ وفد جناب سید عمر جلیل اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود، جناب محمد جلال الدین اکبر ڈائرکٹر میناریٹیز ویلفیر ڈپارٹمنٹ، پروفیسر ایس اے شکور نائب صدرنشین و منیجنگ ڈائرکٹر تلنگانہ اسٹیٹ فینانس کارپوریشن پر مشتمل تھا۔ مرکزی وزیر محترمہ نجمہ ہپت اللہ کے ساتھ ملاقات کے دوران تلنگانہ میں اقلیتی بہبود کے لئے جاری مختلف اسکیمات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا۔ مرکزی وزیر نے اِس بات پر خوشی کا اظہار کیاکہ پہلی مرتبہ کسی ریاست سے وفد نے اقلیتی بہبود اسکیمات پر عمل آوری کا جائزہ لیا ہے۔ مسٹر اروند مریم سکریٹری حکومت ہند، مسٹر وائی پی سنگھ جائنٹ سکریٹری، مسٹر راکیش موہن جائنٹ سکریٹری اور وزارت کے دیگر عہدیدار اِس موقع پر موجود تھے۔ آندھراپردیش ریاستی وقف بورڈ کی تقسیم کے مسئلہ پر محترمہ نجمہ ہپت اللہ نے فوری اقدامات کا وعدہ کیا اور سکریٹری مرکزی حکومت اقلیتی بہبود کو ہدایت دی کہ وہ 18 فروری کو حیدرآباد کا دورہ کریں اور اِس مسئلہ پر دونوں ریاستوں کے عہدیداروں سے بات چیت کی جائے۔ وفد نے یہ بھی بتایا کہ ریاست میں پری میٹرک اسکالرشپ اسکیم کے لئے مقررہ تعداد سے زائد درخواستیں موصول ہوئی ہیں اور اِنھیں ملحوظ رکھتے ہوئے زائد رقم منظور کرنے کی خواہش کی گئی۔ مرکزی وزیر نے کہاکہ پوسٹ میٹرک اسکالرشپ کے سلسلہ میں جو بجٹ بچ جائے گا اُسے پری میٹرک اسکالرشپ میں منتقل کرنے کی ہدایت دی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ مرکزی حکومت کی نئی اسکیم شروع کی جارہی ہے
جس کے تحت دینی مدارس میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ کو تعلیم اور فنی کورسیس میں ٹریننگ دی جائے گی۔ ’ نئی منزل ‘ نامی اس اسکیم کے تحت طلبہ کو آٹھویں جماعت کے مماثل امتحان میں شریک کرایا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ مرکزی حکومت اقلیتی نوجوانوں کی فنی مہارت میں زیادہ دلچسپی رکھتی ہے تاکہ روزگار کے مواقع پیدا ہوں اور ان کی معاشی حالت بہتر ہو۔ نجمہ ہپت اللہ نے کہا کہ سیکورٹی گارڈز کی ٹریننگ کے علاوہ ہیلت کیر سے متعلق پیرا میڈیکل کورسیس میں بھی اقلیتوں کو ٹریننگ دینے کی تجویز ہے۔ انہوں نے اقلیتی آبادی والے علاقوں کی ہمہ جہتی ترقی سے متعلق اسکیم ایم ایس ڈی پی کے تحت تلنگانہ کو 38کروڑ روپئے کی اجرائی سے اتفاق کیا۔ اِس کے علاوہ اُنھوں نے سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف میناریٹیز حکومت ہند کے تحت کوچنگ پروگرامس پر عمل آوری کا جائزہ لینے کا بھی وعدہ کیا۔ اُنھوں نے معروف ادارہ دائرۃ المعارف میں موجود مخطوطات کے تحفظ اور ڈیجیٹلائزیشن کے لئے فنڈس منظور کرنے کا تیقن دیا۔ حکومت تلنگانہ نے قاضی ایکٹ میں ترمیم کی سفارش کی تاکہ قاضیوں کی جانب سے غیر قانونی سرگرمیوں پر قابو پایا جاسکے۔ نجمہ ہپت اللہ نے کہا کہ حیدرآباد میں کنٹراکٹ میریجس کے واقعات سے انہیں دُکھ ہوا۔ انہوں نے قاضی ایکٹ میں ترمیم کے ذریعہ قاضی کے تقرر میں اہلیت کو لازمی قرار دینے اور قاضی کی میعاد کے تعین جیسے اُمور کو شامل کرنے کا تیقن دیا۔نجمہ ہپت اللہ نے ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ محمود علی کی دعوت قبول کرلی اور کہا کہ وہ بہت جلد حیدرآباد کا دورہ کریں گی۔ وہ ملک بھر میں اقلیتوں کے مسائل کا جائزہ لینے کیلئے اندرون ایک ماہ تمام ریاستوں کے وزرائے اقلیتی بہبود کا اجلاس طلب کریں گی۔وفد نے مرکزی حکومت کی ’’استاد‘‘ اسکیم کے تحت مختلف تربیتی پروگرامس متعارف کرانے کی اپیل کی جس سے نجمہ ہپت اللہ نے اتفاق کیا۔

TOPPOPULARRECENT