Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں انسداد رشوت ستانی کیلئے خصوصی اسکیم کی تجویز

تلنگانہ میں انسداد رشوت ستانی کیلئے خصوصی اسکیم کی تجویز

ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو جناب اے کے خان سے انٹرویو ایس ایم بلال

ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو جناب اے کے خان سے انٹرویو
ایس ایم بلال
حیدرآباد /16 جنوری۔ ریاست تلنگانہ کے پہلے ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو مسٹر اے کے خان نے بتایا کہ ریاست کے مختلف محکمہ جات میں کرپشن کی روک تھام کے لئے خصوصی اسکیم تیار کی جا رہی ہے۔ انھوں نے بتایا کہ بیورو ایک ٹیم کی شکل میں کام کرے گا، تاکہ رشوت خور عہدہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کی جاسکے۔ روزنامہ سیاست کو دیئے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں انھوں نے بتایا کہ خصوصی اسکیم کے تحت اینٹی کرپشن بیورو ریاست کے مختلف چیک پوسٹس پر اچانک دھاوے کا منصوبہ رکھتا ہے اور کئی سرکاری دفاتر میں بھی اس قسم کی کارروائی کی جائے گی۔ مسٹر خان نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اطلاعات کے بموجب محکمہ مال، ٹرانسپورٹ، سوشیل ویلفیر، رجسٹریشن، آبکاری اور پولیس ڈپارٹمنٹ میںاکثر کرپشن کی شکایات پائی جاتی ہیں، جب کہ شہر میں گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن، واٹر ورکس اور ٹرانسکو میں رشوت خوری عام ہے۔ انھوں نے ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ عوام رشوت خور عہدہ داروں کے خلاف شکایت کرنے سے گریز نہ کریں اور اینٹی کرپشن بیورو کے ٹول فری نمبر 1094 پر اطلاع دیں۔ انھوں نے بتایا کہ اس نمبر پر درج کرائی گئی شکایتوں کو خفیہ رکھا جاتا ہے اور شکایت کنندہ کی شناخت نہیں کی جاتی۔ مسٹر خان نے بتایا کہ اینٹی کرپشن بیورو دو قسم کی کارروائی کرتا ہے، پہلے عہدہ داروں کو رنگے ہاتھوں گرفتار کرتا ہے اور غیر محسوب اثاثہ جات رکھنے والے عہدہ داروں کے خلاف کارروائی کی جاتی ہے۔ انھوں نے بتایا کہ اینٹی کرپشن بیورو کے دائرہ اختیار میں عوامی نمائندوں کے علاوہ بیورو کریٹس کے خلاف بھی کارروائی کی جاتی ہے، لیکن ان کے خلاف قانونی کارروائی کے لئے حکومت سے اجازت طلب کی جاتی ہے۔ ریاست تلنگانہ میں اینٹی کرپشن بیورو کی تین خصوصی عدالتیں ہیں، جن میں عہدہ داروں کے خلاف مقدمات چلائے جاتے ہیں۔ بیورو خاطی عہدہ داروں کو سزا دلانے کے لئے اپنا سارا زور صرف کرتا ہے، جس کے نتیجے میں 60 تا 65 فیصد مقدمات میں ملزم عہدہ داروں کو سزا سنائی جاتی ہے۔ مسٹر خان نے بتایا کہ تلنگانہ حکومت کی جانب سے مختلف فلاح و بہبود کی اسکیمات چلائی جا رہی ہیں، جن میں محکمہ ہاؤزنگ، پنشن اورسوشیل ویلفیر میں بے قاعدگیوں کے علاوہ رشوت خوری کی شکایات مسلسل موصول ہو رہی ہیں۔ ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو نے بتایا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کی جانب سے ضلع ورنگل میں ایک جلسہ عام میں بے قاعدگیوں اور کرپشن کی اطلاع فراہم کرنے کے لئے عوام کو ایک فون نمبر فراہم کیا گیا تھا، جس کے مثبت نتائج برآمد ہو رہے ہیں اور سرکاری دوا خانوں کے علاوہ شادی مبارک اسکیم سے متعلق شکایتیں زیادہ درج کرائی جا رہی ہیں۔ انھوں نے مزید بتایا کہ تلنگانہ اینٹی کرپشن بیورو میں 40 فیصد مخلوعہ جائدادیں ہیں، جن پر دیانتدار پولیس عہدہ داروں کا تقرر عمل میں لایا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT