Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں اوقافی املاک کی صیانت کے لیے عنقریب نمائندگی

تلنگانہ میں اوقافی املاک کی صیانت کے لیے عنقریب نمائندگی

اسپیشل آفیسر وقف بورڈ کی دیانت داری قابل ستائش ، سکریٹری کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا ڈاکٹر نارائنا کا خطاب

اسپیشل آفیسر وقف بورڈ کی دیانت داری قابل ستائش ، سکریٹری کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا ڈاکٹر نارائنا کا خطاب

حیدرآباد۔13مئی(سیاست نیوز) مجوزہ ریاست تلنگانہ میں اوقافی املاک کی صیانت کے لئے حکومت کے ٹھوس اقدامات کے متعلق گورنر آندھرا پردیش سے بہت جلد نمائندگی کی جائے گی۔ اسٹیٹ سکریٹری کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا ڈاکٹر کے نارائنہ نے تنظیم انصاف گریٹر حیدرآباد و دکن وقف پروٹکشن سوسائٹی کے مشترکہ احتجاجی دھرنے سے خطاب کے دوران ان خیالات کا اظہار کررہے تھے۔ دھرنے کی قیادت جناب میر احمد علی صدر انصاف گریٹر حیدرآباد نے کی جبکہ سینئر کمیونسٹ قائد وسابق رکن پارلیمنٹ راجیہ سبھا جناب سید عزیزپاشاہ ‘کارگذار صدر سنی علماء بورڈ مولانا حامد حسین شطاری‘ مولانا سید شاہ احمد معین الدین قادری (حیدرپاشاہ)‘ صدردکن وقف پروٹکشن سوسائٹی عثمان بن محمد الہاجری‘ صدر ٹی پی ایف گریٹر حیدرآباد منیر الدین مجاہد‘ صدر ہلپ حیدرآباد میجر قادری‘ چیف وائس پریسڈنٹ شیخ شمس الدین احمد‘ حفیظ الدین افروز کے علاوہ دیگر نے بھی اس دھرنے سے خطاب کیا۔ جنرل سکریٹری انصاف گریٹر حیدرآباد منیرپٹیل نے کاروائی چلائی۔ ڈاکٹر نارائنہ نے اوقافی جائیدادوں کے متعلق حکومتوں کے سنجیدہ رویہ کو ضروری قراردیا ۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کی بازیابی اور حفاظت کے لئے مسلم میناریٹی کے حالات میں تبدیلی لائی جاسکتی ہے ۔

انہوں نے کہاکہ کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا روز اول سے ہی اوقافی جائیدادوں کے استحصال پر احتجاج کرتی آرہی ہے اور پارٹی کے کئی قائدین جن میں سینئر کمیونسٹ قائد جناب سیدعزیز پاشاہ کا نام سرفہرست آتا ہے کئی مرتبہ جیل جاچکے ہیں انہوں نے کہاکہ وقف جائیدادوں کو مفاد پرستوں کے نرغے سے آزاد کرانے کے لئے کی جانے والی ہر جدوجہد میں کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کا مکمل تعاون رہے گا۔جناب سید عزیز پاشاہ نے اسپیشل آفیسر وقف بورڈ کی دیانت داری کو قابلِ ستائش قراردیتے ہوئے کہاکہ اوقافی املاک کی حفاظت کے لئے فرض شناس اور دیانت دار عہدیداروں کا تقرر نئی ریاست تلنگانہ میںوقف جائیدادوں کی بازیابی اور تحفظ کے لئے موثر اقدام ثابت ہوگا۔جناب سید عزیزپاشاہ نے کہاکہ صرف تلنگانہ میںہزاروں کروڑ کی موقوفہ جائیدادوں پر قبضے ہیں انہوں نے مذکورہ جائیدادوں کی صیانت کوعلاقہ تلنگانہ کے مسلم اقلیتوں کی معیشت میں تبدیلی لانے کا بہترین ذریعہ قراردیا۔ جناب عثمان بن محمد الہاجری نے احتجاجی دھرنے سے خطا ب کرتے ہوئے وقف ایکٹ ترمیم بل کی کامیاب منظوری میں کمیونسٹ قائد جناب سیدعزیزپاشاہ نے اہم رول ادا کیا ہے

انہوں نے کہاکہ مجوزہ ریاست تلنگانہ میںبھی وقف جائیدادوں کی حفاظت اور بازیابی کے لئے کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا سے تلنگانہ کے مسلمانوں کو کئی توقعات ہیں۔ انہوں نے مشیرآباد جامع مسجد کے تحت وقف اندرا پارک کے اطراف واکناف کی اراضی کی بازیابی کے لئے بھی کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے اسٹیٹ جنرل سکریٹری سے اس موقع پر اپیل کی۔چیف کنونیر ایس سی‘ ایس ٹی‘ بی سی‘ مسلم فرنٹ ثناء اللہ خان نے دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وقف املاک کی حفاظت کے متعلق اسپیشل آفیسروقف بورڈ شیخ محمد اقبال کی مستعدی قابل تعریف ہے مگر جہاں پچیس فیصد مسلمانوں کے غیرمجاز قبضوں میں وقف املاک ہیں تو وہیں 75فیصد وقف جائیدادیں ریڈی اور سرمایہ دادروں کے قبضوں میں ہیں لہذا اسپیشل آفیسروقف بورڈ پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ متولیان اور سجادگان کے متعلق جس قدر سختی برت رہے ہیں اسی طرح موقوفہ جائیدادوں پر قابض غیر مسلم اصحاب کے ساتھ بھی سختی کریں تاکہ تلنگانہ کے وقف بورڈ کو بڑے پیمانے پر فائدہ ہوسکے۔

TOPPOPULARRECENT