Saturday , December 16 2017
Home / Top Stories / تلنگانہ میں آبپاشی پراجیکٹس پر اپوزیشن کی غلط بیانی

تلنگانہ میں آبپاشی پراجیکٹس پر اپوزیشن کی غلط بیانی

کانگریس اور تلگو دیشم کے دور میں کام ٹھپ تھے : ہریش راؤ
حیدرآباد ۔ /15 اکٹوبر (سیاست نیوز) وزیر آبپاشی حکومت تلنگانہ مسٹر ٹی ہریش راؤ نے اپوزیشن جماعتوں کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ اپوزیشن جماعتیں پالمور (محبوب نگر)کے زیرالتواء آبپاشی پراجکٹس کے تعلق سے جھوٹ پر مبنی غلط بیان بازیاں و تشہیر کررہی ہیں اور اپوزیشن جماعتوں بالخصوص کانگریس اور تلگودیشم پارٹیوں کو یاد دلایا کہ کلواکرتی لفٹ اریگیشن اسکیم کے کاموں کو شروع کرنے کیلئے (20) سال درکار ہوئے تھے اور 20 سال کی مدت کے دوران تین مرتبہ ڈی پی آر سی اور تخمینہ جات میں ردوبدل کیا گیا ۔ مسٹر ہریش راؤ نے واضح طور پر کہا کہ سال 2003 ء سے اب تک صرف 50 فیصد کام ہی انجام دیئے گئے لیکن سابقہ حکومتوں نے مذکورہ لفٹ اسکیم کے 90 فیصد کام مکمل کرلئے جانے کی غلط تشہیر کی بلکہ جھوٹ پر مبنی بیان بازیاں کرتی رہیں ۔ اپوزیشن جماعتوں کی اس جھوٹ پر اپنی شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مسٹر ہریش راؤ نے پرزور الفاظ میں کہا کہ ریاست تلنگانہ میں تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی زیرقیادت تلنگانہ حکومت میں ہی مذکورہ لفٹ اسکیم کے 90 فیصد کام انجام دیئے گئے ۔ وزیر آبپاشی نے کہا کہ کلواکرتی لفٹ اسکیم کی گنجائش کو 25 ٹی ایم سی سے بڑھاکر 40 ٹی ایم سی کرنے کا اعزاز صرف اور صرف ٹی آر ایس حکومت کو ہی حاصل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ تین سال کے دوران ٹی آر ایس حکومت نے ضلع محبوب نگر (پالمور) میں آبپاشی پراجکٹس کے جاری کاموں پر 1200 کروڑ روپئے خرچ کی ۔ علاوہ ازیں کلواکرتی لفٹ اریگیشن اسکیم ، کوئل ساگر ، نیٹم پاڈو ، اور بھیما پراجکٹ کے ذریعہ جاریہ سال وسیع فصل کیلئے کم از کم 7.5 لاکھ ایکڑ اراضیات کو زرعی اغراض کیلئے پانی سربراہ کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT