تلنگانہ میں ایمسیٹ : ایک منٹ تاخیر پر بھی داخلہ کی اجازت نہیں

حیدرآباد ۔ 13 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے بعد پہلی مرتبہ ریاست کے انجینئرنگ ، میڈیکل و زرعی یونیورسٹی کالجس میں داخلوں کے لیے ایمسیٹ 2015 ، 14 مئی کو منعقد ہوگا ۔ اور ایمسیٹ کے کامیاب و پرامن انعقاد کو یقینی بنانے کے لیے تیاریاں و انتظامات مکمل کرلیے گئے ۔ انجینئرنگ طلباء کے لیے ایمسیٹ پرچہ اوقات صبح دس تا ایک بجے دن

حیدرآباد ۔ 13 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے بعد پہلی مرتبہ ریاست کے انجینئرنگ ، میڈیکل و زرعی یونیورسٹی کالجس میں داخلوں کے لیے ایمسیٹ 2015 ، 14 مئی کو منعقد ہوگا ۔ اور ایمسیٹ کے کامیاب و پرامن انعقاد کو یقینی بنانے کے لیے تیاریاں و انتظامات مکمل کرلیے گئے ۔ انجینئرنگ طلباء کے لیے ایمسیٹ پرچہ اوقات صبح دس تا ایک بجے دن اور میڈیکل و اگریکلچر طلباء کے لیے ایمسیٹ کے پرچہ اوقات دوپہر 2-30 تا ساڑھے پانچ بجے شام تک رہیں گے ۔ پروفیسر ین وی رمنا راؤ رجسٹرار جواہر لعل نہرو ٹکنالوجیکل یونیورسٹی و کنوینر ایمسیٹ 2015 نے سیاست نیوز کو یہ بات بتائی اور کہا کہ مقررہ وقت سے ایک منٹ تاخیر سے امتحانی مرکز پہونچنے والے طلباء و طالبات کو امتحان میں شرکت کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی جب کہ طلباء وطالبات کو ایک گھنٹہ قبل سے ہی امتحانی مرکز میں داخل ہونے کی اجازت دی جائے گی ۔ اس مرتبہ ہائی ٹیک انداز میں کی جانے والی نقل جیسے واقعات کا سدباب کرنے کے لیے انتہائی سخت اقدامات اور پولیس کا بھر پور تعاون حاصل کیا جارہا ہے ۔

پروفیسر رمنا راؤ نے کہا کہ 16 مئی کو ’ ایمسیٹ کی ‘ (EMCET-Key) جاری کی جائے گی اور جس پر اعتراضات 23 مئی تک قبول کئے جائیں گے اور 28 مئی کو ایمسیٹ 2015 کے نتائج جاری کئے جائیں گے ۔ کنوینر ایمسیٹ نے بتایا کہ اس مرتبہ ایمسیٹ 2015 کے لیے جملہ 2,31,998 طلباء و طالبات نے درخواستیں داخل کی ہیں ۔ جن میں انجینئرنگ کے لیے 1,38,886 اور میڈیکل و اگریکلچرل کے لیے 91,612 طلباء شامل ہیں اور اس تعداد کو پیش نظر رکھتے ہوئے ایمسیٹ کے لیے جملہ 423 امتحانی مراکز قائم کئے گئے ہیں اور ایمسیٹ ویب سائٹ سے ڈاؤن لوڈ کردہ ہال ٹکٹس دکھانے پر ہی طلباء وغیرہ کو امتحان میں شرکت کرنے کی اجازت دی جائے گی ۔ کنوینر نے بتایا کہ ایمسیٹ امتحانی مراکز کے تمام روٹس پر خصوصی بسیں چلانے کے اقدامات کرنے کی آر ٹی سی و محکمہ جات ریونیو ، ٹرانسکو ، صحت و طبابت سے مکمل تعاون حاصل کیا جارہا ہے ۔ کنوینر ایمسیٹ 2015 پروفیسر این وی رمنا راو نے انکشاف کیا کہ طلباء وطالبات کسی کو بھی گھڑی لگا کر آنے کی اس مرتبہ اجازت نہیں دی جائے گی کیوں کہ ہاتھ کی گھڑیوں سے بھی طلباء وطالبات ہائی ٹیک انداز میں نقل کرنے کے خدشات پائے جاتے ہیں ۔

جب کہ طلباء وطالبات کو امتحانی وقت کا اندازہ ہونے کے لیے امتحانی مراکز کے ہر امتحانی ہال ( کمرہ میں ) میں دیواری گھڑی آویزاں کی جارہی ہے ۔ علاوہ ازیں امتحانی ہال میں ہمیشہ کی طرح کیلکولیٹرس ، سیل فونس یا پیجرس و دیگر الکٹرانک اشیاء بھی ساتھ رکھنے کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی ۔ پروفیسر این وی رمنا راؤ نے مزید بتایا کہ ایسے امتحانی مراکز جہاں کوئی مسائل پیدا ہونے کے خدشات پائے جاتے ہیں ان مراکز پر ’ جامرس ‘ کی تنصیب عمل میں لائی جائے گی ۔ ضرورت محسوس ہونے پر ان مراکز پر پولیس کے بم اسکواڈز کو بھی تعینات کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اس مرتبہ 35 سال سے زائد عمر رکھنے والے زائد از 100 افراد نے ایمسیٹ 2015 میں شرکت کرنے کے لیے درخواست فارم داخل کئے ہیں ۔ ان پر پولیس کے ذریعہ کڑی نظر رکھی جائے گی ۔ پروفیسر رمنا راؤ نے بتایا کہ دیرینہ جرمانہ کے ساتھ زائد از 5000 طلباء و طالبات نے اپنی درخواستیں ایمسیٹ 2015 کے لیے داخل کی ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT