Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / !تلنگانہ میں بی جے پی کے پاس کوئی لیڈر نہیں رہا

!تلنگانہ میں بی جے پی کے پاس کوئی لیڈر نہیں رہا

حیدرآباد ۔ 8 ۔ جنوری : ( ایجنسیز ) : بی جے پی ، جس کی جانب سے یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ دوسری اپوزیشن جماعتوں اور حتیٰ کہ حکمران ٹی آر ایس کے بھی اہم قائدین جلد یا بہ دیر پارٹی میں شامل ہونے کے لیے تیار ہیں ، خود اب مشکل حالات سے دوچار ہے ۔ کیوں کہ اس پارٹی کے کم از کم دو قائدین امکان ہے کہ پارٹی چھوڑ کر دوسری پارٹی میں شرکت کرسکتے ہیں ۔ بی جے پی قیادت کہا جاتا ہے کہ ان دو قائدین سے ربط میں ہے اور انہیں پارٹی میں برقرار رکھنے کے لیے تمام تر کوششیں کررہی ہے ۔ ذرائع کے مطابق پارٹی کے دو سینئیر قائدین جن میں ایک محبوب نگر اور دوسرے ورنگل سے تعلق رکھتے ہیں پارٹی چھوڑنے کے کافی اشارے دئیے ہیں ۔ ان میں سے ایک ہیں ناگم جناردھن ریڈی جو متحدہ آندھرا پردیش ریاست میں چندرا بابو نائیڈو حکومت میں وزیر تھے وہ کئی سال سے خود کو پارٹی سرگرمیوں سے دور رکھے ہوئے ہیں ۔ ناگم جناردھن ریڈی کے بارے میں سمجھا جاتا ہے کہ وہ پارٹی قیادت سے خوش نہیں ہیں کیوں کہ انہیں پارٹی میں مناسب مقام نہیں دیا جارہا ہے ۔ جب وہ بی جے پی میں شامل ہوئے تھے تو انہیں نیشنل ایگزیکٹیو میں شامل کیا گیا تھا لیکن گروپ سیاست کے باعث دوسری میعاد کے لیے شامل نہیں کیا ۔ دوسرے قائد جو بی جے پی سے کنارہ کشی اختیار کرسکتے ہیں وہ ہیں حلقہ اسمبلی چریال سے ٹی آر ایس کے سابق رکن اسمبلی کے پرتاپ ریڈی ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پرتاپ ریڈی اب ان کی پرانی پارٹی ، حکمران ٹی آر ایس میں لوٹ کر جانے کے خواہاں ہیں اور حلقہ اسمبلی جنگاؤں سے مقابلہ کرنے کے لیے پارٹی ٹکٹ حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ جس کی نمائندگی فی الوقت ٹی آر ایس کے ایم یادگیری ریڈی کررہے ہیں ۔ لیکن پارٹی قیادت کہا جاتا ہے کہ انہیں اس نشست کے لیے ان کے خلاف ناجائز قبضہ کے الزامات کے بعد دوبارہ نامزد کرنے کے لیے سنجیدہ نہیں ہے ۔ ذرائع نے کہا کہ اس دوران پرتاپ ریڈی ٹی آر ایس کے سینئیر قائدین کے ساتھ رابطہ میں ہیں اور امکان ہے کہ وہ ایک یا دو دن میں گلابی پارٹی میں شامل ہونے کے ان کے فیصلہ کا اعلان کریں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT