Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں جنگل راج ، سریدھر بابو پر حملہ کی مذمت

تلنگانہ میں جنگل راج ، سریدھر بابو پر حملہ کی مذمت

جمہوری و دستوری حقوق پامال ، ملوبٹی وکرامارک کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 23 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : ورکنگ پریسیڈنٹ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ملو بٹی وکرامارک نے کالیشورم پراجکٹ پر اعتراض پیش کرنے والے سابق وزیر سریدھر بابو پر پولیس کے ذریعہ حملہ کرانے کا الزام عائد کیا جمہوری و دستوری حقوق کو مفلوج کرنے کی کوشش پر برہمی کا اظہار کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ملو بٹی وکرامارک نے کہا کہ تلنگانہ میں جنگل راج چل رہا ہے ۔ عوامی حقوق کو پامال کیا جارہا ہے ۔ ناانصافیوں اور حق تلفیوں کے خلاف آواز اٹھانے والے کانگریس قائدین کے خلاف سرکاری مشنری کا بیجا استعمال کیا جارہا ہے ۔ سیاسی انتقام لینے کے لیے پولیس کی خدمات سے استفادہ کیا جارہا ہے ۔ ملو بٹی وکرامارک نے کہا کہ کالیشورم پراجکٹ کی تعمیر کے لیے آج عوامی سماعت کا اہتمام کیا گیا تھا عوام کو اپنی آزادانہ رائے پیش کرنے سے روکنے کے لیے ٹی آر ایس نے غنڈہ گردی کا مظاہر کیا ہے ۔اور پولیس نے بھی ان کا بھر پور تعاون کیا ہے ۔ ڈرا دھمکا کر عوام سے کالیشورم پراجکٹ کی تائید کرانے کی کوشش کی گئی تائید نہ کرنے پر انہیں سرکاری اسکیمات سے محروم کردینے کی دھمکیاں دی گئی ہیں جس کی اطلاع ملتے ہی سابق ریاستی وزیر کانگریس کے سینئیر قائد ڈی سریدھر بابو پہونچے ۔ انہوں نے کسانوں کے ساتھ مل کر ان کے حقوق کو پہونچنے والے نقصانات کے بارے میں استفسار کیا ۔ کیا یہ کوئی جرم ہے ۔ یا کوئی قانون کی خلاف ورزی ہے ۔ حکومت اس کی وضاحت کریں ۔ عوامی سماعت کے دوران جمہوری انداز پر سوالات کرنے والے سریدھر بابو کو پولیس نے غیر ضروری گرفتار کرتے ہوئے عوامی آواز کو دبانے کی کوشش کی ہے ۔ جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے ۔ انہوں نے حکومت سے غیر مشروط سریدھر بابو سے معذرت خواہی کرنے کا مطالبہ کیا ۔ غیر جمہوری اقدامات کرنا حکومت کو زیب نہیں دیتا ۔ ورکنگ پریسیڈنٹ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے پراجکٹس سے بڑے پیمانے پر معمول حاصل کرنے کے لیے ری ڈیزائن کرتے ہوئے آندھرائی کنٹراکٹرس کو فائدہ پہونچانے کی کوشش کرنے کا الزام عائد کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT