Tuesday , December 11 2018

تلنگانہ میں سروے، قومی سطح سے عوام کی وطن واپسی

ممبئی سے بسوں اور ریل گاڑیوںمیں ہجوم، ٹکٹس کی اڈوانس بکنگ ، کئی افراد وقت پر پہونچنے فکر مند

ممبئی سے بسوں اور ریل گاڑیوںمیں ہجوم، ٹکٹس کی اڈوانس بکنگ ، کئی افراد وقت پر پہونچنے فکر مند
ممبئی ۔ 11 ۔ اگست (پی ٹی آئی) نئی ریاست تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے ہزاروں عوام جو فی الوقت ممبئی میں مقیم ہیں، کافی بڑی تعداد میں ممبئی سے تلنگانہ جارہے ہیں اور ان کے ہجوم سے ممبئی سے تلنگانہ کیلئے چلنے والی بسیں اور ٹرینس کھچا کھچ بھری چل رہی ہیں ۔ یہ لوگ نئی ریاست تلنگانہ میں آئندہ ہفتہ منعقد ہونے والے سماجی سروے میں اپنی تفصیلات کے اندراج کیلئے تلنگانہ روانہ ہورہے ہیں۔ تلنگانہ کے اضلاع سے تعلق رکھنے والے لاکھوں افراد نے روزگار کی تلاش میں مہاراشٹرا ، گجرات جیسی ریاستوں کو نقل مقام کیا ہے ۔ ممبئی میں کہا جاتا ہے کہ تلنگانہ کے تقریباً 8 لاکھ افراد رہتے ہیں ۔ 19 اگست 2014 ء کو ایک دن منعقد شدنی اس سماجی سروے کیلئے نقل مقام کرنے والے ہر خاندان کے ایک دو افراد ان کے گھروں کو واپس ہورہے ہیں تاکہ سروے میں تفصیلات کا اندراج کروائیں اور اپنے ساتھ خاندان کے باقی افراد کے دستاویزات جن کی سروے کے سلسلہ میں ضرورت ہوگی لے جارہے ہیں ۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کہا ہے کہ سروے میں اندراج کروانے والے لوگ ہی مستقبل میں ریاستی حکومت کی مختلف فلاحی اسکیمات اور فوائد سے استفادہ کرنے کے اہل ہوں گے ۔ بشمول سبسیڈیز ، راشن ، آروگیہ شری فوائد ، پنشنس ، فیس ری ایمبرسمنٹ وغیرہ ۔ اس لئے تلنگانہ کے عوام دوسری ریاستوں میں رہنے والے ان کے رشتہ داروں اور دوست احباب سے کسی بھی قیمت پر گھر واپس آنے کیلئے کہہ رہے ہیں تاکہ وہ سروے کے موقع پر موجود رہ سکیں۔ ممبئی سے تلنگانہ کیلئے بسیں 18 اگست تک فل ہیں۔ اب کوئی نشست دستیاب نہیں ہے ۔ ہر بس میں 45 سیٹس ہوتی ہیں ۔ ورلی کے ایک خانگی بس ٹراویل ایجنسی کے مالک نے یہ بات بتائی اور کہا کہ ہم اضافی بسوں کو چلانے پر توجہ دے رہے ہیں۔ ممبئی سے تلنگانہ کیلئے چلائی جانے والی آندھرا اسٹیٹ بسوں کی بھی یہی حالت ہے ۔ بمبئی سے نظام آباد کو روزانہ ایک بس چلتی ہے ۔ یہ بس 17 اگست تک فل ہے ۔ 60 سالہ ٹکٹ بکنگ ایجنٹ ، جناردھن دھرما پوری نے یہ بات کہی ۔ تلنگانہ کیلئے ٹرینس بھی مکمل طور پر بک ہیں۔ بینک ایگزیکیٹیو پرشانت اروار نے کہا ’’ممبئی سے تلنگانہ کیلئے تمام ٹرینس پوری طرح بک ہیں۔ 18اگست تک ٹکٹس دستیاب نہیں ہیں ۔ میں اس بات پر فکرمند ہوں کہ میں اپنے والدین کو عادل آباد میں ہمارے گاؤں کو کس طرح روانہ کروں ۔ ریلویز کو تلنگانہ عوام کی ضرورتوں کو پورا کرنے کیلئے زائد ٹرینس چلانی چاہئے ‘‘۔ تاہم سنٹرل ریلوے کے ترجمان اے کے سنگھ نے کہا کہ فی الوقت تلنگانہ کیلئے زائد ٹرینس چلانے کی کوئی تجویز نہیں ہے ۔ ٹی آر ایس ممبئی ریجن صدر ہیمنت کمار ریڈی نے کہا کہ انہوں نے تلنگانہ اتھاریٹیز سے اپیل کی ہے کہ ممبئی سے تلنگانہ جانے والے عوام کیلئے زائد بسوں اور ٹرینس کو چلانے کو یقینی بنایا جائے۔

TOPPOPULARRECENT