Monday , January 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں سوائن فلو اموات کی حکومت ذمہ دار

تلنگانہ میں سوائن فلو اموات کی حکومت ذمہ دار

حیدرآباد /21 جنوری (سیاست نیوز) نائب صدر تلنگانہ پردیش کانگریس محمد علی شبیر نے تلنگانہ میں سوائن فلو کی وبا اور 29 افراد کی اموات پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ان اموات کی ذمہ دار حکومت ہے۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ 6 جنوری کو تلنگانہ پردیش کانگریس کی جانب سے چیف منسٹر تلنگانہ کو مکتوب روانہ کرت

حیدرآباد /21 جنوری (سیاست نیوز) نائب صدر تلنگانہ پردیش کانگریس محمد علی شبیر نے تلنگانہ میں سوائن فلو کی وبا اور 29 افراد کی اموات پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ان اموات کی ذمہ دار حکومت ہے۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ 6 جنوری کو تلنگانہ پردیش کانگریس کی جانب سے چیف منسٹر تلنگانہ کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے سوائن فلو پر کنٹرول کا مطالبہ کیا گیا تھا، لیکن حکومت اس مرض کے پھیلاؤ کو قبول کرنے کے لئے تیار نہیں تھی اور اب چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سوائن فلو پر تشویش ظاہر کر رہے ہیں، جب کہ ان کی شریک حیات ہاسپٹل میں زیر علاج ہیں اور ان کی دختر کے علاوہ ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ سمن بھی فلو سے متاثر ہوچکے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ حکومت کی مجرمانہ غفلت سے کئی افراد کی موت واقع ہوئی ہے، جب کہ حکومت عوام کی صحت پر توجہ دینے کی بجائے چھٹی منا رہی تھی۔ انھوں نے کہا کہ ماہ جنوری میں اب تک 221 سوائن فلو کے کیسس سامنے آئے ہیں، جن میں سے 12 افراد کی موت واقع ہوئی ہے۔ صرف کل ایک دن میں پانچ افراد کی موت واقع ہوئی ہے، جن میں چار خواتین شامل ہیں۔ انھوں نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ تاخیر سے بیدار ہوئے ہیں، انھوں نے آج سکریٹریٹ میں محکمہ صحت کا جائزہ اجلاس طلب کیا، اگر یہ اجلاس سکریٹریٹ کی بجائے گاندھی ہاسپٹل یا ایرہ گڈہ کے ہاسپٹل میں طلب کیا جاتا تو بہتر ہوتا۔ انھوں نے کہا کہ تلنگانہ واحد ریاست ہے، جہاں تیزی سے سوائن فلو کی وباء پھیلی ہے اور سب سے زیادہ اموات بھی تلنگانہ میں ہوئی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ جب تلنگانہ حکومت ہی اس وباء سے انکار کر رہی ہے تو مرکز اس جانب کیوں توجہ دے گی۔ لیکن اب یہ وبا چیف منسٹر کے گھر تک پہنچ چکی ہے، جس کی وجہ وہ محکمہ صحت پر برہمی کا اظہار کر رہے ہیں۔ مسٹر محمد علی شبیر نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ فوری جنگی خطوط پر اقدامات کرتے ہوئے متاثرین کا حکومت کی جانب سے مفت علاج کرے اور ریاست میں ہیلتھ ایمرجنسی کا اعلان کرے۔ انھوں نے کانگریس کیڈر کو بھی متاثرین کی مدد کا مشورہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT