Saturday , January 20 2018
Home / ہندوستان / تلنگانہ میں سیمی کے 2 مہلوک کارکنوں کے لکھنو میں

تلنگانہ میں سیمی کے 2 مہلوک کارکنوں کے لکھنو میں

3 افراد کے قتل اور بینک ڈکیتی میں ملوث ہونے کا شبہ

3 افراد کے قتل اور بینک ڈکیتی میں ملوث ہونے کا شبہ
لکھنو ۔ 6 ۔ اپریل : ( سیاست ڈاٹ کام) : تلنگانہ میں سیکوریٹی فورسیس نے سیمی کے جن دو مشتبہ کارکنوں کو مار گرایا ہے شبہ ہے کہ ماہ فروری میں یہاں سنسنی خیز تہرے قتل اور ایک اے ٹی ایم سے 50 ، 50 لاکھ روپئے لوٹنے کے واقعہ میں ملوث ہوسکتے ہیں ۔ پولیس نے آج یہ اطلاع دی ۔ تلنگانہ پولیس نے 4 فروری کو ضلع نلگنڈہ میں مشتبہ سمیتی کے 2 کارکنوں کا انکاونٹر کردیا تھا ۔ وہ لکھنو کے ایک ATM کو لوٹنے کے واقعہ میں محرک تھے ۔ اور ان اطلاعات کی توثیق کے لیے ریاستی پولیس کی ایک ٹیم تلنگانہ کے لیے روانہ ہورہی ہے ۔ سینئیر پولیس سپرنٹنڈنٹ یشوی یادو نے بتایا کہ محمداعجاز الدین ( 30 سال ) اور محمد اسلم ( 27 سال ) سیمی کے 7 خطرناک کارکنوں میں شامل تھے جو کہ مدھیہ پردیش میں گذشتہ سال 13 اکٹوبر کو ایک جیل سے فرار ہوگئے تھے ۔ جنہیں ضلع نلگنڈہ میں پولیس نے مار گرایا ہے ۔ واضح رہے کہ لکھنو کے ایک مصروف ترین علاقہ میں 3 افراد نے 27 فروری کو ایک بینک میں بھاری رقم جمع کروانے لائی تھی ، ان پر حملہ کر کے 50 ، 50 لاکھ روپئے لوٹ لیے گئے اور وہاں موجود افراد کو بھگانے کے لیے فائرنگ کردی تھی ۔ اس واقعہ میں 3 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT