Friday , August 17 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں عنقریب ’ کے سی آر کٹس ‘ اسکیم

تلنگانہ میں عنقریب ’ کے سی آر کٹس ‘ اسکیم

ہر تین ماہ میں کاسمیٹکس کٹس کی تقسیم کی تجویز ، حکومت تلنگانہ کی تیاری
حیدرآباد ۔ 23 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : چیف منسٹر کے سی آر کے نام سے تلنگانہ میں مزید ایک اسکیم متعارف ہورہی ہے ۔ حکومت نے ریزیڈنشیل اسکولس میں ماہانہ کاسمیٹک چارجس دینے کے بجائے ہر تین ماہ میں ایک مرتبہ ’ کے سی آر کا سمیٹک کٹس ‘ تقسیم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ نومبر کے اواخر تک تمام کٹس 487 ریزیڈنشیل اسکولس پہونچ جائیں گے ۔ واضح رہے کہ تاملناڈو میں حاملہ خواتین کے لیے شروع کی گئی ’ اماں کٹس اسکیم ‘ کے طرز پر ریاست میں ’ کے سی آر کٹس ‘ اسکیم شروع کی گئی ہے ۔ جس کے مثبت نتائج برآمد ہورہے ہیں ۔ اس کے بعد حکومت چیف منسٹر کے سی آر کے نام سے کے سی آر کاسمیٹک کٹس اسکیم کا آغاز کررہی ہے ۔ جو ریزیڈنشیل اسکولس میں زیر تعلیم طلبہ کے لیے رہے گی ریاست میں ہاسٹلس میں مقیم طلبہ کے لیے ماہانہ فی کس 75 روپئے کاسمیٹک چارجس دئیے جاتے تھے جس سے طلبہ اپنے لیے صابن ، ٹیلکم پاوڈر ، ٹوتھ پیسٹ ، شامپو وغیرہ خریدا کرتے تھے ۔ طلبہ گذشتہ 10 سال سے احتجاج کرتے ہوئے کاسمیٹک کے چارجس میں اضافہ کرنے کا حکومت سے مطالبہ کررہے تھے ۔ 2017-18 کے بجٹ سیشن میں چیف منسٹر نے کاسمیٹک چارجس میں اضافہ کرنے کا جائزہ لینے کے لیے وزراء پر مشتمل ایک کابینی سب کمیٹی تشکیل دی تھی ۔ سب کمیٹی کی سفارش پر حکومت نے چارجس کے بجائے کٹس دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ابھی تک جو چارجس دئیے جاتے تھے اس سے چار گناہ زیادہ قیمت کٹس پر خرچ کیے جارہے ہیں ۔ اعلیٰ عہدیداروں کی جانب سے اس اسکیم کو کامیاب بنانے بڑے پیمانے پر اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ ایک دو ریزیڈنشیل اسکولوں میں اس اسکیم کو تجربہ کے طور پر بھی آزمایا گیا ہے ۔ ریاست میں ایس سی طبقات کے لیے 134 ایس ٹی طبقات کے لیے 51 اور اقلیتوں کے لیے 160 اور بی سی طبقات کے لیے 142 ریزیڈنشیل اسکولس میں 2 لاکھ سے زیادہ طلبہ زیر تعلیم ہیں ۔ کاسمیٹک اشیاء ماہانہ تقسیم کرنا انتظامیہ پر بوجھ ثابت ہورہا ہے ۔ اس لیے ہر تین ماہ میں ایک مرتبہ تقسیم کرنے کی حکمت عملی تیار کی جارہی ہے ۔ طلبہ کو سہولت فراہم کرنے کے لیے کاسمیٹک اشیاء کا زائد کوٹہ ریزیڈنشیل اسکولس میں رکھنے کے بھی اقدامات کئے جارہے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT