Thursday , September 20 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں لوکیش اور شرمیلا کے رول میں اضافہ

تلنگانہ میں لوکیش اور شرمیلا کے رول میں اضافہ

تلگودیشم اور وائی ایس آر کانگریس کو مستحکم کرنے کی ذمہ داری

تلگودیشم اور وائی ایس آر کانگریس کو مستحکم کرنے کی ذمہ داری
حیدرآباد /9 اکتوبر (سیاست نیوز) تلگودیشم اور وائی ایس آر کانگریس کو تلنگانہ میں مستحکم کرنے نارا لوکیش اور مسز شرمیلا کو ذمہ داریاں سونپی گئی ہیں۔ وائی ایس آر سی پی ضلع کھمم تک سمٹ کر رہ گئی ہے، جہاں اسکے تین ارکان اسمبلی اور ایک آیز پی منتخب ہوئے، جبکہ ایک رکن اسمبلی نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ اسی طرح بی جے پی سے اتحاد کے باعث تلگودیشم کے 15 ارکان اسمبلی منتخب ہوئے، تاہم اس کے کئی ارکان ٹی آر ایس میں شامل ہو رہے ہیں ۔ واضح رہے کہ چیف منسٹر بننے کے بعد صدر تلگودیشم این چندرا بابو نائیڈو اپنی ساری توجہ آندھرا پر مرکوز کئے ہوئے ہیں، جس کی وجہ سے تلنگانہ ارکان اسمبلی کے درمیان تال میل کا فقدان ہے اور یہاں پارٹی کئی گروپس میں تقسیم ہو گئی ہے۔ اب نائیڈو نے پارٹی قائدین کے نظریاتی اختلافات دور کرنے اپنے فرزند نارا لوکیش کو ذمہ داری سونپی ہے اور پارٹی قائدین کو ہدایت دی کہ وہ لوکیش سے رابطہ بنائے رکھیں، جب کہ لوکیش کو یہ ہدایت دی گئی ہے کہ وہ پارٹی کے استحکام کیلئے تلنگانہ میں رکنیت سازی مہم کا آغاز کریں۔ چندرا بابو نائیڈو نے پارٹی قائدین کو تلنگانہ کے کسانوں کی ابتر صورت حال کا جائزہ لینے اور انھیں خودکشی سے روکنے کے علاوہ بس یاترا کی ہدایت دی ہے، جس کی نگرانی لوکیش کریں گے۔ اسی دوران صدر وائی ایس آر کانگریس جگن موہن ریڈی نے بھی تلنگانہ میں پارٹی کے استحکام کا فیصلہ کیا ہے۔ انھوں نے کھمم کے ایم پی پی سرینواس کو پارٹی کا ورکنگ پریسیڈنٹ نامزد کیا ہے اور اپنی بہن شرمیلا کو تلنگانہ میں پارٹی کے استحکام کی ذمہ داری سونپی ہے۔ اس طرح دونوں جماعتوں کے قائدین علاقہ تلنگانہ میں اپنی جماعتوں کو مضبوط و مستحکم کرنا چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT