Friday , January 19 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں مسلمانوں کو تحفظات اور مساویانہ حقوق فراہم کرنے کا عزم

تلنگانہ میں مسلمانوں کو تحفظات اور مساویانہ حقوق فراہم کرنے کا عزم

مسجد پرنس شہامت جاہ میں بعد نماز جمعہ ڈپٹی چیف منسٹر الحاج محمد محمود علی کا خطاب

مسجد پرنس شہامت جاہ میں بعد نماز جمعہ ڈپٹی چیف منسٹر الحاج محمد محمود علی کا خطاب
حیدرآباد۔12ڈسمبر(سیاست نیوز) مخالفین کی تنقیدوں کا عملی اقدامات کے ذریعہ جواب دینے کا اعلان کرتے ہوئے نائب وزیر اعلی تلنگانہ ریاست الحاج محمد محمو دعلی نے کہاکہ حکومت تلنگانہ ریاست میںآصف جاہی دور حکومت کی بازیابی کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن اقدامات کرے گی۔ آج یہاں مسجد پرنس شہامت جاہ بہادر ‘ ریڈہلز میںبعد نماز جمعہ مصلیان مسجد کے عظیم اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے جناب الحاج محمد محمود علی نے تلنگانہ کے مسلمانو ںکو بارہ فیصد تحفظات کے علاوہ تمام شعبہ حیات میں مساویانہ حقوق کی فراہمی کاوعدے کو پورا کرنے کے عزائم کا اظہار کیا اور کہاکہ کسی بھی قسم کی تنقید تلنگانہ حکومت کے اعلانات اور ارادوں کی تکمیل میںرکاوٹ نہیںبن سکتی ۔ انہوں نے اس بات کا اعلان کیاکہ وزیراعلی مسٹر کے چندرشیکھر رائو تلنگانہ ریاست کے ہندو اور مسلمانو ںکو اپنی دوآنکھوں کی طرح سمجھتے ہیں ۔ انہو ںنے مزیدکہاکہ ٹی آر ایس پارٹی نے تلنگانہ تحریک کے دوران اور انتخابات کے وقت بھی اس بات کا اعلان کیا تھا کہ سکیولرازم کی بنیادوں پر تلنگانہ ریاست کی تشکیل عمل میںلائی جائے گی اور ٹی آر ایس پارٹی سربراہ ووزیراعلی تلنگانہ ریاست مسٹر کے چندرشیکھر رائو اپنے وعدوں کی تکمیل کے لئے سنجیدہ رویہ اختیار کئے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ جس طرح آصف جاہی دور حکومت میںتلنگانہ کی گنگا جمنی تہذیب ساری دنیا کے لئے ایک مثال تھی اسی طرز پر تلنگانہ کی تہذیب کافروغ تلنگانہ حکومت کی اولین ذمہ داری ہوگا۔انہوں نے کہاکہ 1030کروڑ کا اقلیتی بجٹ جاری کرتے ہوئے وزیراعلی نے اقلیتی طبقات کی فلاح وبہبود کے لئے ریاستی حکومت کی سنجیدگی ظاہر کی۔ انہوں نے کہاکہ بحیثیت سے نائب وزیراعلی تلنگانہ ریاست میںاپنی ذمہ داری سمجھتا ہوں کے میںاقلیتی طبقات بالخصوص مسلمانوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کی ہر ممکن کوشش کروں گا ۔مزید کہاکہ پانچ سو کروڑ روپئے اقلیتی طلبہ کی اسکالرشپ اور فیس ری ایمبرسمنٹ کے لئے جاری کئے گئے ہیں تاکہ جاریہ سال طلبہ کو تعلیم حاصل کرنے میںکسی قسم کی رکاوٹ پیش ناآئے ۔انہوں نے مزید بتایا کہ حسب ضرورت اقلیتی طلبہ کی اسکالرشپ اور فیس ری ایمبرسمنٹ کے لئے مزیدرقم حکومت کی جانب سے جاری کی جائے گی۔انہوں نے مسلم اقلیتی طلبہ سے اپنی تمام تر توجہہ بہتر تعلیم کے حصول پر مرکوز کرنے کی اپیل کی۔ اور کہاکہ معاشرے میںپھیلنے والی برائیو ں کو ختم کرنے اورمعاشی پسماندگی کو دور کرنے کے لئے مسلم اقلیتی طلبہ کا تعلیم یافتہ ہونا ضروری ہے۔ اور فرقہ پرست طاقتوں کے ناپاک عزائم کو ناکام بنانے کے لئے تلنگانہ ریاست میںنظام دور حکومت کا احیاء وقت کی اہم ضرورت ہے اور اس پر تلنگانہ حکومت جامعہ منصوبے کے تحت کام کررہی ہے۔قبل ازایں پرنس شہامت جاہ بہادر نبیرہ آصف جاہ صابع کی جانب سے نائب وزیراعلی الحاج محمد محمو دعلی کو تہنیت پیش کی گئی اور قرآن شریف بطور تحفہ پیش کیاگیا۔ امام مکہ مسجدمولانا عثمان نقشبندی‘ جسٹس محمد شاہ قادری‘ رحیم اللہ خان نیازی‘ محمد شریف‘ عبدالمقیدچندہ‘ محمد فصیح اللہ ‘ عمر بن قاسم ‘ محمد عارف‘ محمد شہانواز خان‘ سکندرمعشوقی کے علاوہ دیگر ٹی آر ایس قائدین بھی اس موقع پر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT