Sunday , September 23 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں ملازمین کی خوشامدی ، تعطیلات میں اضافہ سے عوام کو مشکلات

تلنگانہ میں ملازمین کی خوشامدی ، تعطیلات میں اضافہ سے عوام کو مشکلات

حیدرآباد ۔ 24 ڈسمبر ۔ ( سیاست نیوز) تلنگانہ کے سرکاری ملازمین کو حکومت نے چھٹیوں میں اضافہ کے ذریعہ خوش کرنے کی کوشش کی ہے تو دوسری طرف زائد چھٹیوں کے سبب عوام کو اپنے مسائل کی یکسوئی میں دشواریوں کا سامنا ہے ۔ چیف منسٹر چندرشیکھر راؤ نے عید اور تہواروں کے موقع پر دو روزہ تعطیلات کا اعلان کیا جس پر عمل آوری کا آغاز کرسمس تہوار سے ہورہا

حیدرآباد ۔ 24 ڈسمبر ۔ ( سیاست نیوز) تلنگانہ کے سرکاری ملازمین کو حکومت نے چھٹیوں میں اضافہ کے ذریعہ خوش کرنے کی کوشش کی ہے تو دوسری طرف زائد چھٹیوں کے سبب عوام کو اپنے مسائل کی یکسوئی میں دشواریوں کا سامنا ہے ۔ چیف منسٹر چندرشیکھر راؤ نے عید اور تہواروں کے موقع پر دو روزہ تعطیلات کا اعلان کیا جس پر عمل آوری کا آغاز کرسمس تہوار سے ہورہا ہے ۔ جاریہ ہفتے تقریباً پانچ دن سرکاری دفاتر میں کام کاج ٹھپ رہے گا ۔ اگرچہ کرسمس کی عام تعطیل کل 25 ڈسمبر اور 26 ڈسمبر کو ہے لیکن سرکاری ملازمین اور عہدیداروں نے آج چہارشنبہ سے ہی رخصت حاصل کرلی ہے ۔ چہارشنبہ کو اختیاری تعطیل تھی جس سے بیشتر عہدیداروں اور سرکاری ملازمین نے استفادہ کرتے ہوئے چھٹی لگادی ۔ جمعرات اور جمعہ کو سرکاری تعطیلات ہوں گی ، جس کے باعث ملازمین اور عہدیداروں کی اکثریت نے ہفتہ کو ایک دن کی چھٹی لے لی ہے ۔ اس طرح انھیں مسلسل پانچ دن چھٹیاں مل جائیں گی ۔ سکریٹریٹ اور دیگر سرکاری دفاتر میں آج سنسان ماحول تھا کیونکہ ملازمین طویل چھٹیوں کے باعث اپنے آبائی مقام کے لئے روانہ ہوگئے ۔ سکریٹریٹ کے بیشتر ڈپارٹمنٹس نے عہدیداروں اور ملازمین کی کرسیاں خالی نظر آئیں۔ اس بارے میں جب موجود ملازمین سے پوچھا گیا تو اُن کا کہنا تھا کہ اب یہ کرسیاں پیر کے دن ہی پُر نظر آئیں گی ۔ سکریٹریٹ میں کئی افراد کو اپنے کاموں کی یکسوئی کے سلسلے میں مایوس لوٹتے ہوئے دیکھا گیا۔ اکثر و بیشتر سال کے آخری مہینے میں عہدیدار اور ملازمین اپنی بقایہ چھٹیاں حاصل کرلیتے ہیں

۔ اب جبکہ ڈسمبر اختتامی مرحلے میں ہے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ سرکاری دفاتر میں کام کاج یکم جنوری نئے سال تک مفلوج رہے گا ۔ چیف منسٹر چندرشیکھر راؤ نے یکم جنوری کو بھی عام تعطیل کا اعلان کردیا۔ اس طرح سال 2014 ء کا اختتام اور 2015 ء کا آغاز چھٹیوں سے ہوگا ۔ اقلیتی بہبود کے دفاتر میں تو صورتحال دیگر دفاتر سے مختلف تھی ۔ حج ہاؤز میں جہاں کئی دفاتر موجود ہیں ہر سیکشن سنسان نظر آرہا تھا ۔ بتایا جاتا ہے کہ محکمہ کے ایک اعلیٰ عہدیدار کے گھر میں شادی کے انتظامات کے سلسلے میں کئی عہدیدار اور ملازمین گزشتہ ایک ہفتہ سے مصروف ہیں۔ دفتر میں حاضری رجسٹر پر دستخط کرتے ہی وہ شادی کے دعوت ناموں کی تقسیم اور دیگر کام کے سلسلے میں دفتر سے روانہ ہورہے ہیں۔ حج ہاوز میں اپنے مسائل کے سلسلے میں پوچھنے والے افراد نے شکایت کی کہ کئی اہم مسائل کے حل کیلئے انھیں گزشتہ ایک ہفتہ سے چکر کاٹنے پڑ رہے ہیں اور آج جواب دیدیا گیا کہ وہ پیر کے دن دفتر آئیں۔ سرکاری دفاتر میں اگر اسی طرح کی صورتحال رہی تو عوامی مسائل کی یکسوئی کس طرح ممکن ہوپائے گی ۔ چیف منسٹر چندرشیکھر راؤ کو جو کئی نئی فلاحی اسکیمات پر عمل آوری کے خواہاں ہے دفاتر میں کارکردگی بہتر بنانے پر بھی غور کرنا ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT