Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں نئے اضلاع کی تشکیل کے بعد پہلی یوم آزادی تقریب

تلنگانہ میں نئے اضلاع کی تشکیل کے بعد پہلی یوم آزادی تقریب

حکومت کی اسکیمات اور پروگراموں پروزرا نے روشنی ڈالی
حیدرآباد 15اگست(سیاست نیوز ) ریاست تلنگانہ کے نوتشکیل شدہ 21 ضلع ہیڈکوارٹرس میں پہلی مرتبہ یوم آزادی تقاریب منائی گئی۔ ریاستی حکومت نے انتظامی اور عوامی سہولت کے لئے 21اکتوبر کو ریاست میں 21 نئے اضلاع کی تشکیل عمل میں لائی تھی ۔وزیراعلی کے چندر شیکھر راؤ نے اضلاع کے تمام وزراء کو ہدایت دی تھی کہ وہ ریاست کی تشکیل کے بعد حکومت کی جانب سے شروع کردہ بہبودی اسکیمات اور ترقیاتی کاموں سے عوام کو واقف کروانے کے لئے اس موقع سے استفادہ کریں۔یوم آزادی کے موقع پر سابق کی تقاریر کے برخلاف حکومت نے ہر ضلع میں اس کے پروگراموں ، اسکیمات ، استفادہ کنندگان کی تفصیلات کا انکشاف کرنے کی ہدایت دی تھی جس کے مطابق وزرا نے یوم آزادی کے پروگرام کے موقع پر اپنی تقاریر کے دوران سرکاری اسکیمات، پروگراموں اور حکومت کے کارناموں کا اجاگر کیا اور یہ بتایا کہ کس طرح ان اسکیمات کے آغاز کے بعد لوگوں کی زندگیوں میں تبدیلیاں آئی ہیں۔کلیانا لکشمی اسکیم سے کئی غریب خاندانوں کو مدد ملی اور انھیں مالی بوجھ سے راحت نصیب ہوئی ، اسی طرح بکروں کی تقسیم کی اسکیم نے مختلف طبقات میں بڑی تبدیلی لائی ہے جس کی وضاحت کی گئی۔نئے اضلاع میں قومی پرچم لہرانے کے بعد وزرا نے ان تفصیلات کو بھی اجاگرکیا جس میں یہ بتایا گیا کہ کس طرح نئے اضلاع عوام کی ضروریات کی تکمیل کررہے ہیں۔یوم آزادی کی تقاریر کرپشن کے خاتمہ کے لئے حکومت کی سخت جدوجہد پر مرکوز تھی ۔ تلنگانہ کے نائب وزیراعلی کڈیم سری ہری نے ضلع ورنگل میں یوم آزادی کے موقع پر قومی پرچم لہرایا ،اس موقع پر انہوں نے واضح کیا ہے کہ ریاستی حکومت کسانوں کی بہبود کے لئے پابند عہد ہے ۔انہوں نے کہاکہ حکومت کسانوں کو زرعی آلات اور ٹریکٹرس فراہم کررہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ آنے والے سال حکومت کسانوں کے زرعی قرض کے بوجھ کو کم کرے گی اور ربیع اور خریف کے موسم میں کسانوں کو فی ایکڑ دو ہزار روپئے دیئے جائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ کسانوں کی بہبود اور ان کے مسائل کے حل کے لئے فوری اقدامات کئے جارہے ہیں۔ وزیرعمارات وشوارع تملا ناگیشور راو نے بھی حکومت کے فلاحی اقدامات اور پروگراموں پر روشنی ڈالی۔

TOPPOPULARRECENT